Choor Haram Khoor Aur Zameer Faroosh

چور، حرام خور اور ضمیر فروش

شب و روز یہ ہی کہانی ہے،

چھینا جھپٹی ہے، کھینچاتانی ہے،

قتل و غارت، فساد، دھشتگردی،

اِک تسسلسل ہے، اِک روانی ہے،

پوری دُنیا میں، عجب پہچان بنی

جو دہشت گردِ ہے، پاکستانی ہے،

خُدا خوفی، نہ رحم، نہ کرم

موت تم کو بھی اِک دن آنی ہے،

عصمتیں، عزتیں لُٹتیں ہر روز،

کیسی گُمراہ یہ جوانی ہے،

چور، حرام خور اور ضمیر فروش،

ایسے لوگوں کی حکمرانی ہے،

محمد عمران خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1143) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Muhammad Imran Khan, Choor Haram Khoor Aur Zameer Faroosh in Urdu. Also there are 38 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Muhammad Imran Khan.