MENU Open Sub Menu

Tum Bolo Kia Kerti Thi?

تم بولو کیا کرتی تھی؟

دردِ فراق کے سالوں میں

محبت کے ملالوں میں

خود سے باتیں کرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

میں تو آہیں بھرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

جب سورج شام کو ڈھلتا تھا ، میں ویرانوں میں نکل جاتا تھا

رو رو کے تری یادوں میں ، نصف شب میں لوٹ آتا تھا

میں تھوڑا تھوڑا مرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

میں تو آہیں بھرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

خاموشیوں کے پہن کے کپڑے ، میں اُکتایا ہوا رہتا تھا

بس کوئی نہ مجھ سے بات کرے ، سب سے میں یہ کہتا تھا

بے وجہ سب سے لڑتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

میں تو آہیں بھرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

ساری ساری رات میری ، کروٹوں میں گزر جاتی تھی

نیند بھی اِک پل کو ہائے ! میری آنکھوں میں نہ آتی تھی

ہجراں میں سکون ہرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

میں تو آہیں بھرتا تھا ، تم بولو کیا کرتی تھی؟

نہال عنائیت گل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(222) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of NEHAL INAYAT GILL, Tum Bolo Kia Kerti Thi? in Urdu. Also there are 7 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of NEHAL INAYAT GILL.