Khushiyan Baanta Raha Khud Ghamon Mein Kho Gaya

خُوشیاں بانٹتا رہا خُود غموں میں کھو گیا

خُوشیاں بانٹتا رہا خُود غموں میں کھو گیا

عجب شخص تھا جانے کیا سے کیا ہو گیا

اشکوں کی بہتی قطاروں سے ہمیشہ مگر

دل کی بنجر و ویراں زمیں کو بھگو گیا

کتنا نازک مزاج ، کتنا نرم دِل تھا مگر

غم ملے اتنے کہ بِالاخر پتھر کا ہو گیا

عجیب ہی داستان رہی اُس کی عمر بھر

جیتا تو رہا مگر ، پستیوں میں کھو گیا

زندہ رہنے کی تمنا تو تھی اُس کو مگر

چُھپ کر کفن میں اُبدی نیند سو گیا

پارس سہیل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(952) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Paaris Sohail, Khushiyan Baanta Raha Khud Ghamon Mein Kho Gaya in Urdu. Also there are 5 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Paaris Sohail.