Hasrat E Na Tamam

حسرتِ نا تمام

اے زندگی تُُو

کیوں اس قدر اجنبی ہوئی ہے

مرے خیال کی ہر ایک آھٹ

مرے غموں کا ہر ایک چہرہ

تری صدا سے رہا ہے مانوس

تو پھر عجب سی یہ کشمکش کیوں؟

مرے خیالوں پہ سرزنش کیوں؟

کبھی تو آ کر یہ کام کر دے

کہ میری خواہش ، میری دعا کو

وصول کر لے، قبول کر لے

رابعہ کنول زیشان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(862) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Rabia Kanwal Zeshan, Hasrat E Na Tamam in Urdu. Also there are 2 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rabia Kanwal Zeshan.