Woh Aksar Mujh Se Kehti Hai

وُہ اکثر مجھ سے کہتی ہے

وضاحت :

وُہ اکثر مجھ سے کہتی ہے

مجھے تُم یاد آتے ہو ۔

کبھی خوابوں خیالوں میں

کبھی دن کے اُجالوں میں

کبھی شاموں کے میلوں میں

کبھی راتوں کے جھمیلوں میں

کیا تُمھیں بھی ستاتی ہے

کیا میری یاد آتی ہے

کبھی بے چین ہوتے ہو

ذہین یوں ہی اٹکتا ہے

سانسیں لڑکھڑاتی ہیں

قدم بھی ڈگماتے ہیں

کہتے کیوں نہیں مجھ سے

کہ میری یاد آتی ہے

کہہ بھی دو میرے ہم دم

مجھے تُم یاد آتے ہو

میں کہتا ہوں ارے پگلی......!

یہ لمحے آتے اور جاتے ہیں

یادیں لاتے لے جاتے ہیں

مجھے تُم یاد رہتے ہو

سبھی خوابوں خیالوں میں

اِنہی دِن کے اُجالوں میں

سبھی شاموں کے میلوں میں

انہی راتوں کے جھمیلوں میں

مجھے تُم یاد رہتے ہو....

دھڑکن کے آنے جانے میں

سانسوں کے تانے بانے میں

خیالوں کو بنانے میں

اس دل کو منانے میں

مجھے تُم یاد ہو جاناں

مجھے تُم یاد ہو مانا

میں اقرار کرتا ہوں

میں تُم سے پیار کرتا ہوں

وسیم راجپوت

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(392) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Waseem Rajpoot, Woh Aksar Mujh Se Kehti Hai in Urdu. Also there are 3 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Waseem Rajpoot.