Kabhi KhwaboN MeiN HuN Wo Ro-baroo Tu Sher Hota Hae

کبھی خوابوں میں ہوں وہ روبرو تو شعر ہوتا ہے

کبھی خوابوں میں ہوں وہ روبرو تو شعر ہوتا ہے

کہ جب ہوتی ہے ان سے گفتگو تو شعر ہوتا ہے

یہ جلتا ہے، تصور ذہن میں تخلیق ہوتا ہے

نکل آئے جو آنکھوں سے لہو تو شعر ہوتا ہے

اسے بانہوں میں بھر کے چوم لوں شرما سی جائے وہ

کرے جب دل کچھ ایسی جستجو تو شعر ہوتا ہے

کبھی وہ یاد آ جائے یا اس کا خواب آ جائے

کسی صورت بھی ہو وہ دو بدو تو شعر ہوتا ہے

سنانا چاہتا ہوں میں جنہیں سب حال دل اپنا

نہیں ہوتی جب ان سے گفتگو تو شعر ہوتا ہے

مری بے تاب آنکھوں کو کہیں تاریکی شب میں

دکھے جب چاند چہرہ ہو بہو تو شعر ہوتا ہے

جہاں کے شور سے بچ کر میں بیٹھوں جب کبھی تنہا

سنائی دے مجھے جب ہاو ہو تو شعر ہوتا ہے

طبعیت بے قراری پر اتر آئے ظہیراحمد

جو لے انگڑائی کوئی آرزو تو شعر ہوتا ہے

ظہیراحمدمغل (حویلی کہوٹہ آزاد کشمیر پاکستان )

ظہیر احمد مغل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(934) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Zaheer Ahmed Mughal, Kabhi KhwaboN MeiN HuN Wo Ro-baroo Tu Sher Hota Hae in Urdu. Also there are 1 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Zaheer Ahmed Mughal.