Mashghala

مشغلہ

کچھ دنوں سے یہ مشغلہ ہے مرا

اُن کی آنکھوں سے روشنی لے کر

اِن ستاروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کے ہونٹوں سے دلکشی لے کر

اِن بہاروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کی باتوں سے سادگی لے کر

اِن اشعاروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کی زلفوں سے رات سی لے کر

غم کے ماروں کوسونپ دیتا ہوں

اُن کے ہاتھوں سے تازگی لے کر

اِن نظاروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کی ہلکی سی اک ہنسی لے کر

اپنے یاروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کی اِک پل کی خامشی لے کر

رازداروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کی پائل سے سُر کبھی لے کر

آبشاروں کو سونپ دیتا ہوں

اُن کے تیور سے تشنگی لے کر

قلم کاروں کو سونپ دیتا ہوں

کچھ دنوں سے یہ سلسلہ ہے مرا

کتنی صدیوں کے پار جاتا ہوں

پھر بھی لیکن کمی سی رہتی ہے

پھر بھی لیکن میں ہار جاتا ہوں

ذیشان احمد ذکی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(294) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Zeeshan Ahmad Zaki, Mashghala in Urdu. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Zeeshan Ahmad Zaki.