Kya Jane Kis Khayaal Mein Kis Rastay Mein Hon

کیا جانے کس خیال میں کس راستے میں ہوں

کیا جانے کس خیال میں کس راستے میں ہوں

شاید میں تیرے بعد کسی مسئلے میں ہوں

وہ بھی گھرا ہوا ہے زمانے کی بھیڑ میں

میں بھی اسی جہاں سے ابھی رابطے میں ہوں

تو مسکرا کے آج مجھے کر رہا ہے یاد

یعنی میں تیرے ساتھ ترے آئنے میں ہوں

صحرا میں تیز دھوپ کا احساس ہی نہیں

باقی ہے ایک پیڑ ابھی آسرے میں ہوں

کیسے کسی فرات سے ہو دوستی مری

میں تشنہ لب حسین ترے قافلے میں ہوں

وفا نقوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(255) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of WAFA NAQVI, Kya Jane Kis Khayaal Mein Kis Rastay Mein Hon in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 36 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of WAFA NAQVI.