Aaj Tak Jo Bhi Howa Is Ko Bhala Dena Hai

آج تک جو بھی ہوا اس کو بھلا دینا ہے

آج تک جو بھی ہوا اس کو بھلا دینا ہے

آج سے طے ہے کہ دشمن کو دعا دینا ہے

آ مرے یار پھر اک بار گلے سے لگ جا

پھر کبھی دیکھیں گے کیا لینا ہے کیا دینا ہے

آج تک ہم نے بہت ظلم کیے ہیں خود پر

عہد کرتے ہیں کہ اب خود کو سزا دینا ہے

جسم پر جان کا جو قرض چلا آتا ہے

اب کے فصل آئی تو وہ قرض چکا دینا ہے

اب اندھیرے تو بہت سر پہ چڑھے آتے ہیں

اب چراغوں میں لہو اپنا جلا دینا ہے

والی آسی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(473) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of WALI AASI, Aaj Tak Jo Bhi Howa Is Ko Bhala Dena Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 21 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of WALI AASI.