Jee Ka Janjaal Hai Ishhq Miyan Qissa Yeh Tamam Karo Wali

جی کا جنجال ہے عشق میاں قصہ یہ تمام کرو والیؔ

جی کا جنجال ہے عشق میاں قصہ یہ تمام کرو والیؔ

بڑی رات گئی اب سو جاؤ کچھ دیر آرام کرو والیؔ

سب جاگنے والے راتوں کے شب زندہ دار نہیں ہوتے

تم اپنے ساتھ میں اوروں کی کیوں نیند حرام کرو والیؔ

سب بچھڑے ساتھی مل جائیں مرجھائیں چہرے کھل جائیں

سب چاک دلوں کے سل جائیں کوئی ایسا کام کرو والیؔ

کیوں گھبرائے گھبرائے ہو کیوں اکتائے اکتائے ہو

اک مدت کے بعد آئے ہو کچھ دن تو قیام کرو والیؔ

ہم دارا ہیں نہ سکندر ہیں درویش ہیں مست قلندر ہیں

چاہو تو ہمارے ساتھ بسر تم بھی اک شام کرو والیؔ

جب بھول گئے تم یاروں کو اپنے پیاروں دل داروں کو

پھر شہر کے منصب داروں کو جھک کے سلام کرو والیؔ

تم ناحق بھیس بدلتے ہو ہم کو یونہی اچھے لگتے ہو

کیوں قشقہ کھینچو دیر میں بیٹھو ترک اسلام کرو والیؔ

والی آسی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(371) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of WALI AASI, Jee Ka Janjaal Hai Ishhq Miyan Qissa Yeh Tamam Karo Wali in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 21 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of WALI AASI.