Mukhalifat Hai Zaroori Tumhain Pata Nahi Hai

مخالفت ہے ضروری تمہیں پتہ نہیں ہے

مخالفت ہے ضروری تمہیں پتہ نہیں ہے

چراغ کیسے جلے گا جہاں ہوا نہیں ہے

تمہارے ہاتھ چھڑانے سے رک گیا ہے سفر

یہ دھوپ چھاؤں مسافر کا مسئلہ نہیں ہے

یہ خود کشی بھی میاں سخت بے مزہ نکلی

کہ زہر کھا کہ بھی دیکھا یے ذائقہ نہیں ہے

میں ڈھونڈ لایا ہوں جب اس کے جیسا دوجا شخص

تو اب وہ کہنے لگا مجھ سا تیسرا نہیں ہے

تمہیں پتہ ہے میں جنت سے ہو کے آیا ہوں

تمہارا شہر تو اس سے ذرا جدا نہیں ہے

وقاص عزیز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1896) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Waqas Azez, Mukhalifat Hai Zaroori Tumhain Pata Nahi Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Waqas Azez.