Asmaa Par Abr Paray Ka Safar Mare Liye

آسماں پر ابر پارے کا سفر میرے لیے

آسماں پر ابر پارے کا سفر میرے لیے

خاک پر مہکا ہوا چھوٹا سا گھر میرے لیے

لفظ کی چھاگل جو چہکے خاکداں آباد ہو

وجد میں آنے لگیں سارے شجر میرے لیے

دور تک اڑتے ہوئے جگنو تری آواز کے

دور تک ریگ رواں پر اک نگر میرے لیے

آشنا نظروں سے دیکھیں رات بھر تارے تجھے

گھورتی آنکھوں کی یہ بستی مگر میرے لیے

لے گئی ہے ساری خوشبو چھین کر ٹھنڈی ہوا

پتیاں بکھری پڑی ہیں خاک پر میرے لیے

بند اس نے کر لیے تھے گھر کے دروازے اگر

پھر کھلا کیوں رہ گیا تھا ایک در میرے لیے

خاک پر بکھرے ہوئے قدموں تلے روندے ہوئے

تحفۃً لائی ہوا میرے ہی پر میرے لیے

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(904) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Asmaa Par Abr Paray Ka Safar Mare Liye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.