Chuna Hum Ne Pahari Rasta

چنا ہم نے پہاڑی راستہ

چنا ہم نے پہاڑی راستہ

اور سمت کا بھاری سلاسل توڑ کر

سمتوں کی نیرنگی سے ہم واقف ہوئے

ابھری چٹانوں سے لڑھکنے

گھاٹیوں سے کروٹیں لینے کی

اک بگڑی روش

ہم نے بھی اپنائی

کھڈوں کی تہ میں بہتے پانیوں سے

ہم نے چلنے کا چلن سیکھا

درختوں اور پھولوں سے

قطاریں توڑنے کی

اور ہوا سے

منہ اٹھا کر اپنی مرضی سے

کئی سمتوں میں بے آرام ہونے کی ادا سیکھی

زماں سے ہم نے سیکھا

سب زمانوں میں رواں ہونا

ہمیں راس آ گیا کوسوں میں چلنا

افق کی سرمئی محراب پر نظریں جمائے

کسی سیدھی سڑک پر

دور اک بستی کے سینے سے لگے

برسوں پرانے

ہچکیاں لیتے مکاں کی اور جانے کا جنوں

مدھم پڑا

ہم بٹ گئے

چیڑھوں کی شاخوں سے اترتی کترنوں میں

چنا ہم نے پہاڑی راستہ

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(459) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Chuna Hum Ne Pahari Rasta in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.