Kis Kis Se Nah Woh Lapat Raha Tha

کس کس سے نہ وہ لپٹ رہا تھا

کس کس سے نہ وہ لپٹ رہا تھا

پاگل تھا یوں ہی چمٹ رہا تھا

مری رات گزر رہی تھی ایسے

میں جیسے ورق الٹ رہا تھا

ساگر میں نہیں تھی موج اک بھی

ساحل تھا کہ پھر بھی کٹ رہا تھا

میں بھی تو جھپٹ رہا تھا خود پر

جب میرا اثاثہ بٹ رہا تھا

دیکھا تو نظر تھی اس کی جل تھل

مشکیزۂ ابر پھٹ رہا تھا

قسمت ہی میں روشنی نہیں تھی

بادل تو کبھی کا چھٹ رہا تھا

نشہ تھا چڑھاؤ پر سحر دم

پیمانۂ عمر گھٹ رہا تھا

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(894) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Kis Kis Se Nah Woh Lapat Raha Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.