Talash

تلاش

ایک محراب پھر دوسری پھر کئی

بے کراں تیرگی میں ہویدا ہوئیں

کوئی تھا

کوئی ہے

کوئی ہوگا کہیں

ساعتیں تین اک ساتھ پیدا ہوئیں

روح کے ہاتھ میرے بدن کا گلا

گھونٹ کر تھک گئے

ہاتھ میرے بدن کے بھی اٹھے مگر

دامن خواہش رائیگاں تک گئے

انگلیاں ٹوٹ کر کرچیاں ہو گئیں

مٹھیاں بند ہونے سے مجھ پر کھلا

ہڈیاں کانچ کی میرے ہاتھوں میں تھیں

اب مرے جسم میں میری ہی کرچیاں

ڈھونڈھتی پھر رہی ہیں مجھے اور میں

اپنے ٹوٹے ہوئے ہاتھ تھامے ہوئے

خوف کی اس گپھا میں چھپا ہوں جہاں

ایک محراب پھر دوسری پھر کئی

بے کراں تیرگی میں ہویدا ہوئیں

کوئی تھا

کوئی ہے

کوئی ہوگا کہیں

ساعتیں تین اک ساتھ پیدا ہوئیں

ظہور نظر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(687) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Talash by Zahoor Nazar - Read Zahoor Nazar's best Shayari Talash at UrduPoint. Here you can read the best poetry Talash of Zahoor Nazar. Talash is the most famous poetry by Zahoor Nazar. People love to read poetry by Zahoor Nazar, and Talash by Zahoor Nazar is best among the whole collection of poetry by Zahoor Nazar.

Zahoor Nazar is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Zahoor Nazar. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Zahoor Nazar. On this page, you can read Talash by Zahoor Nazar. Talash is the best poetry by Zahoor Nazar.

Read the Zahoor Nazar's best poetry Talash here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Zahoor Nazar's best Shayari, Talash of Zahoor Nazar will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Zahoor Nazar, regard it as the best poetry Talash of Zahoor Nazar.

We recommend you read the most famous poetry, Talash of Zahoor Nazar here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.