Aisay Is Haath Se Giray Hum Log

ایسے اس ہاتھ سے گرے ہم لوگ

ایسے اس ہاتھ سے گرے ہم لوگ

ٹوٹتے ٹوٹتے بچے ہم لوگ

اپنا قصہ سنا رہا ہے کوئی

اور دیوار کے بنے ہم لوگ

وصل کے بھید کھولتی مٹی

چادریں جھاڑتے ہوئے ہم لوگ

اس کبوتر نے اپنی مرضی کی

سیٹیاں مارتے رہے ہم لوگ

پوچھنے پر کوئی نہیں بولا

کیسے دروازہ کھولتے ہم لوگ

حافظے کے لیے دوا کھائی

اور بھی بھولنے لگے ہم لوگ

عین ممکن تھا لوٹ آتا وہ

اس کے پیچھے نہیں گئے ہم لوگ

ضیا مذکور

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1664) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Zia Mazkoor, Aisay Is Haath Se Giray Hum Log in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Zia Mazkoor.