سعودی عرب میں فلم شباب شیاب کو پہلی علاقائی فلم کا اعزاز مل گیا

فلم کی کہانی چار بوڑھے دوستوں کے گرد گھومتی ہے جو بزرگ شہریوں کے گھر میں رہائش پذیر ہیں

سعودی عرب میں فلم شباب شیاب کو پہلی علاقائی فلم کا اعزاز مل گیا
ریاض (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 نومبر2018ء) سعودی عرب میں سینما کھلنے کے بعد عربی زبان میں بنائے جانے والی فیچر فلم ’شباب شیاب‘ ریلیز کی جارہی ہے جسے ملک میں ریلیز ہونے والی پہلی علاقائی فلم کا اعزاز حاصل ہوگا۔ ’شباب شیاب‘ نامی اس فلم کو امیج نیشن ابوظہبی ریاض میں ریلیز کردی گئی فلم کا متحدہ عرب امارات میں پریمیئر 17 نومبر کو 'اٹلانٹس دی پام' میں ہوگا جس کے بعد فلم 22 نومبر کو تمام سینماؤں میں ریلیز کی جائے گی۔

فلم کی ہدایات یاسر ال یًسیری نے دی ہیں اور اس فلم کی کہانی بھی انہوں نے ہی لکھی ہے۔

(جاری ہے)

اس فلم کی کہانی چار بوڑھے دوستوں کے گرد گھومتی ہے جو بزرگ شہریوں کے گھر میں رہائش پذیر ہیں۔فلم کی کہانی اس وقت ایک اہم موڑ اختیار کرتی ہے جب ان میں سے ایک کی قسمت جاگ اٹھتی ہے اور چاروں ایڈونچر کے لیے دبئی پہنچتے ہیں۔یاسر ال یًسیری نے کہا کہ ’ شباب شیاب ایک خاندان ، دوستی اور ذاتی کھوج کی کہانی ہے اور یہ خلیجی ممالک کے مداحوں کو خاص طور پر پسند آئے گی۔‘انہوں نے کہا کہ ’یہ سعودی عرب میں ریلیز ہونے والی پہلی علاقائی فلم ہوگی اور ہم اس کے لیے بہت پٴْرجوش ہیں‘۔یاسر ال یًسیری کا کہنا تھا ’عربی زبان میں انٹرٹینمنٹ خطے کی زندگی کی بہترین عکاسی کرتی ہے۔‘۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 08/11/2018 - 19:59:32

Your Thoughts and Comments