قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کیخلاف مبینہ بغاوت

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کیخلاف مبینہ بغاوت

تاہ ٹیم مینجمنٹ، سینئر کرکٹرز کا سرفراز احمد کی کپتانی پر اعتماد کا اظہار، بغاوت کی افواہوں مسترد، سنیئر کھلاڑی شعیب ملک، محمد حفیظ، محمد عامر اور اظہر علی کے سرفراز کے ساتھ دوستانہ مراسم ہیں،ٹیم میٹنگ میں کوچ اور سرفراز احمد نے کھلاڑیوں کو ہدایت کی کہ وہ اپنے آپ پر یقین رکھیں , ایک اچھی فتح ٹیم کو دوبارہ فتوحات کی جانب گامزن کرسکتی ہے،ٹیم میں گروپنگ کی خبریں سازش کا حصہ ہیں جس کا مقصد ٹیم کو بدنام کرنا ہے،ذرائع پاکستانی ٹیم مینجمنٹ

جمعہ جنوری 9:48 pm
ڈینڈن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 جنوری2018ء) پاکستان کرکٹ ٹیم مینجمنٹ اور سینئر کھلاڑیوں نے سرفراز احمد کی کپتانی پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ٹیم میں بغاوت کی افواہوں کو مسترد کردیا۔ڈینڈن میں پریکٹس سیشن کے بعد گراونڈ میں ہونے والی ٹیم میٹنگ میں سنیئر کرکٹرز اور ٹیم انتظامیہ نے کپتان سرفراز احمد کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا اور ان قیاس آرائیوں کو ختم کیا جن میں یہ تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے کہ نیوزی لینڈ کے ہاتھوں دو ون ڈے میچوں میں شکست کے بعد سرفراز احمد کی قیادت شدید خطرات سے دوچار ہے اور گراونڈ میں سرفراز احمد کے رویے کی وجہ سے کھلاڑیوں کا ایک گروپ ان کے خلاف بغاوت کرسکتا ہے۔

پی سی بی ترجمان نے بغاوت اور کپتان کو تبدیل کرنے کی خبروں کو بے بنیاد اور من گھڑت قرار دیا ہے۔

(خبر جاری ہے)

واضح رہے کہ ابتدائی دومیچوں بیٹنگ میں ناکام رہنے کے بعد سرفراز احمد کو تنقید کا سامنا ہے اور ماہرین انہیں مشورہ دے رہے ہیں کہ وہ بیٹنگ آرڈر میں اوپر آئیں۔ پہلے میچ میں پاکستانی کپتان نے 8 اور دوسرے میچ میں 3 رنز بنائے تھے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ تمام کھلاڑی اور ٹیم انتظامیہ سر جوڑ

خبر کی مزید تفصیل پڑھئیے

کر بیٹھ گئی اور سب کو یہی پیغام دیا گیا کہ ہمت ہارنے کی ضرورت نہیں ہے، ہار جیت کھیل کا حصہ ہے۔

تمام کھلاڑیوں نے کپتان اور کوچ کی باتیں غور سے سنیں اور اس تاثر کو مسترد کردیا کہ نیوزی لینڈ کو اس کے گراونڈ پر شکست نہیں دی جاسکتی۔ذمے دار ذرائع کا کہنا ہے کہ سنیئر کھلاڑی شعیب ملک، محمد حفیظ، محمد عامر اور اظہر علی کے سرفراز احمد کے ساتھ دوستانہ مراسم ہیں۔ٹیم میٹنگ میں کوچ مکی آتھر اور سرفراز احمد نے کھلاڑیوں کو ہدایت کی کہ وہ اپنے آپ پر یقین رکھیں، ایک اچھی فتح ٹیم کو دوبارہ فتوحات کی جانب گامزن کرسکتی ہے۔

پاکستانی ٹیم انتظامیہ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹیم میں گروپنگ کی خبریں سازش کا حصہ ہیں جس کا مقصد ٹیم کو بدنام کرنا ہے۔ان کے مطابق پاکستانی کرکٹ ٹیم نے آئی سی سی چیمپنز ٹرافی سمیت 9 ون ڈے انٹر نیشنل میچ جیتے، ٹیم جب تک کامیابی حاصل کرتی رہی سب خاموش رہے، نیوزی لینڈ میں دو میچ ہارنے سے ٹیم میں اختلافات کو ہوا دینے کی ناکام کوشش کی گئی ہے، پاکستانی ٹیم سرفراز احمد کی کپتانی میں متحد ہے اور بغاوت اور ناتشار کی خبریں ٹیم کو بدنام کرنے کی مہم کا حصہ ہیں۔ ۔
Team management, senior cricketer Surfraz Ahmed's confidence in Kapisa's abduction, rejects rumors of rebellion Sohail Malik, Mohammad Hafeez, Mohammad Amir and Azhar Ali are friendly celebrations, coach and Sarfraz Ahmed in the team meeting have instructed the players to believe in themselves. A team of team members can be part of the group's conspiracy team, which aims to defame the team, sources of media team management.

Pakistan cricket team management and senior players dismissed the rumors of the insurgency in the team, expressing full confidence in Sarfraz Ahmed's retirement. Senior cricketers and team management captain Sarfraz Ahmed in the Ground Ground meeting after the practice session in Dandon Expressed full confidence in the leadership and ended the speculation in which it was trying to impose that Sarfraz Ahmed's leadership is under severe threat after defeat in New One-Day matches, and in Gordon. Due to the behavior of Sarfraz Ahmed, a group of players can rebel against them

مزید خبریں