سابق ٹیسٹ کرکٹر ،لاہور قلندر کے ڈائریکٹر عاقب جاوید کی ٹیسٹ کرکٹ کو ختم کرنے کی تجویز

22کھلاڑی اور کوچنگ سٹاف کے بغیر کوئی ٹیسٹ کرکٹ نہیں دیکھتا،آئی سی سی کو مستقبل کا فیصلہ کرلینا چاہیے‘گفتگو

بدھ اکتوبر 17:18

سابق ٹیسٹ کرکٹر ،لاہور قلندر کے ڈائریکٹر عاقب جاوید کی ٹیسٹ کرکٹ کو ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 اکتوبر2018ء) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق ٹیسٹ کرکٹر اور لاہور قلندر کے ڈائریکٹر عاقب جاوید نے ٹیسٹ کرکٹ کو ختم کرنے کی تجویز دیتے ہوئے کہا ہے کہ 22 کھلاڑی اور کوچنگ سٹاف کے بغیر کوئی ٹیسٹ کرکٹ نہیں دیکھتا،اب وقت آگیا ہے کہ آئی سی سی کو اس فارمیٹ کے مستقبل کا فیصلہ کرلینا چاہیے۔نجی ٹی وی کے مطابق عاقب جاوید نے کہا کہ براڈ کاسٹرز کو بھی ٹیسٹ کرکٹ میں کوئی دلچسپی نہیں۔

جن ممالک نے ٹیسٹ کرکٹ کھیلنی ہے آپس میں طے کر کے کھیلے۔ ایک دن آئے گا کہ ٹیسٹ کرکٹ ختم ہو جائے گی، اس کا کوئی مستقبل نہیں ۔انہوںنے کہا کہ دبئی میں جاری پاکستان اور آسٹریلیا کے ٹیسٹ میں شائقین نام کو بھی نہیں۔ایسے میں کھیلنے والے کو کیا مزہ آے گا۔ صرف دونوں ٹیموں کے کھلاڑی ہی ایک دوسرے کو سپورٹ کرنے کے لئے موجود ہیں۔

(جاری ہے)

ایسی کرکٹ کا کیا فائدہ ہوگا۔

لوگوں کو ان ٹیسٹ میچز میں کوئی دلچسپی نہیں۔ ایک دو ممالک کو چھوڑ کر باقی سب جگہ ٹیسٹ کرکٹ کا یہ ہی حال ہے۔ کرکٹ کو دیکھنے والوں کے پاس اب اتنا وقت نہیں کہ وہ سارا سارا دن بیٹھ کر بور میچز کو دیکھیں ۔ اب شائقین ایسی کرکٹ دیکھنے کے خواہش مند ہیں جو جلد ختم ہوں اور لوگ انٹرٹین ہوں۔ جتنی لیگز ابھی کھیلی جارہی ہیں اس کے بعد لوگ ٹیسٹ میچز کے لئے اسٹیڈیم کا رخ کیوں کریں گے۔ آئی سی سی کو فیوچر ٹور پروگرام سے اس کو نکال دینا چاہیے۔ جو ممالک اس کو کھیلنا چاہتے ہیں۔ وہ ضرور کھیلیں۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 10/10/2018 - 17:18:26

Your Thoughts and Comments