طالبان نے ننھے افغان فٹبالر میسی کو قیمتی تحفے سے محروم کر دیا

طالبان حملے میں بچے کا پوراخاندان بے سروسامان نقل مکانی پر مجبور ہوگیا،عرب ٹی وی

جمعرات دسمبر 13:09

طالبان نے ننھے افغان فٹبالر میسی کو قیمتی تحفے سے محروم کر دیا
کابل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 دسمبر2018ء) افغانستان کے ایک کم عمر فٹ بال کے شوقین بچے مرتضیٰ کو اس وقت عالمی شہرت ملی تھی جب اس نے ارجنٹائن کے فٹ بالر میسی کے اور ان کے خاندان کی دعوت پر بارسلونا پہنچ گیا۔ مشہور فٹ بالر میسی نے یادگار کے طورپر افغان بچے کو اپنے نام کی ایک شرٹ تحفے میں دی تھی مگرحال ہی میں معلوم ہوا ہے کہ طالبان شدت پسندوںنے مرتضیٰ کو اس تحفے سے محروم کردیا ہے۔

عرب ٹی وی کے مطابق مرتضیٰ احمدی کا قصہ دو سال قبل سوشل میڈیا پر وائرل ہوا۔

(جاری ہے)

اس نے پلاسٹک کی ایک شرٹ پہن رکھی تھی جس پر ارجنٹائنی فٹ بالر میسی کانام لکھا گیا تھا۔اس تصویر نے غیرمعمولی شہرت اختیار کی یہاں تک کہ ننھے افغان مداح کا پیغام میسی تک جا پہنچا۔ میسی نے بارسلونا میں اس کی دعوت کی۔اس کے علاوہ اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال کی طرف سے بھی اس کی مدد کی گئی۔اطلاعات کے مطابق حال ہی میں طالبان نے اچانک ان کے گائوں پرحملہ کردیا جس کے نتیجے میں مرتضیٰ احمدی اور اس کے دیگراقارب سب کچھ گھر پر چھوڑ اپنی جانیں بچانے کے لیے نقل مکانی پر مجبور ہوگئے۔ احمدی کو روتے اور چلاتے دیکھا گیا۔اس کا کہناتھا کہ وہ میسی کی طرف سے دیئے گئے شرٹ کے تحفے سے محروم ہوگیا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 06/12/2018 - 13:09:34

Your Thoughts and Comments