پی ایس ایل چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سے "کوئٹہ" کا نام چھن جانے کا امکان

بلوچستان حکومت نے ٹیم میں صوبے کے کھلاڑی شامل نہ کرنے پر لاتعلقی اختیار کرنے کا فیصلہ کر لیا

muhammad ali محمد علی جمعہ فروری 22:07

پی ایس ایل چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سے "کوئٹہ" کا نام چھن جانے کا امکان
کوئٹہ (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔14فروری2020ء ) پی ایس ایل چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سے "کوئٹہ" کا نام چھن جانے کا امکان، بلوچستان حکومت نے ٹیم میں صوبے کے کھلاڑی شامل نہ کرنے پر لاتعلقی اختیار کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ کی دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز ٹورنامنٹ کے آغاز سے قبل تنازعے کا شکار ہو گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بلوچستان حکومت نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سے لا تعلقی اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جس کے باعث پی ایس ایل چیمپئن ٹیم سے کوئٹہ کا نام چھن سکتا ہے۔

اس حوالے سے قومی اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر قاسم خان سوری کی جانب سے بھی تحفظات کا اظہار کیا گیا ہے۔ بلوچستان حکومت نے الزام عائد کیا ہے کہ ٹیم کے مالک سے کوئٹہ کے کھلاڑیوں کو مواقع دینے کا مطالبہ کرنے پر انہوں نے یہ کہہ دیا ہے کہ اگر ان پر زیادہ دباو ڈالا گیا تو وہ ٹیم کا نام تبدیل کر دیں گے۔

(جاری ہے)

ٹیم کے مالک ندیم عمر نے جواب دیا ہے کہ وہ ٹیم کا نام تبدیل کر کے چارسدہ گلیڈی ایٹرز رکھ دیں گے۔

اس تمام تنازعے کے باعث کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی کٹ کی نمائش کی تقریب میں صوبائی حکومت کی کسی شخصیت نے شرکت نہیں کی۔ جبکہ بلوچستان حکومت نے پاکستان سپر لیگ میں کھلاڑیوں کو نظر انداز کرنے اور کوئٹہ میں میچ نہ کرانے پر صوبائی سطح پر کوئٹہ پریمیئر لیگ کرانے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔ صوبائی حکومت کا کہنا ہے کہ کوئٹہ پریمئر لیگ میں کرکٹ کے کھلاڑیوں کو زیادہ مواقع ملیں گے اور وہ ثابت کر سکیں گے کہ وہ پاکستان سپر لیگ سمیت کسی بھی ٹیم کا حصہ بننے کے اہل ہیں۔

یہاں یہ بات واضح رہے کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جانب سے کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے دو کھلاڑیوں کو موقع دیا تھا جن میں جلات خان اور بسم اللہ خان شامل ہیں۔ جبکہ پی ایس ایل 5 کیلئے عبدالناصر نامی نوجوان کرکٹر کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 14/02/2020 - 22:07:07

Your Thoughts and Comments