اپنے تجربے کو نوجوانوں کی مدد کے لئے استعمال کرنا چاہتا ہوں ، محمد یوسف

ہفتہ ستمبر 22:25

اپنے تجربے کو نوجوانوں کی مدد کے لئے استعمال کرنا چاہتا ہوں ، محمد یوسف
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 12 ستمبر2020ء) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد یوسف کہا ہے کہ وہ اپنے تجربے کو نوجوانوں کی مدد کے لئے استعمال کرنا چاہتے ہیں اور ایک بار پھر اپنے ملک کی خدمت کے خواہاں ہیں۔کرکٹ پاکستان ڈاٹ کام ڈاٹ پی کے میں گفتگو میں انہوں نے کہا کہ کرکٹ بورڈ میں مصباح الحق، وقار یونس، یونس خان، ثقلین مشتاق اور مشتاق احمد سمیت تقرریاں اچھی ہوئی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ جتنے بھی سابق کرکٹرز لیے گئے ان کی کوالیفکیشن شاندار ہے، محمد یوسف نے کہا کہ میں اب پی سی بی کا ملازم ہوں، مجھے بورڈ ٹیم کے علاوہ کہیں بھی کام کا کہے کروں گا۔سابق کپتان نے کہا کہ مجموعی طور پر انگلینڈ میں پاکستان ٹیم اچھا کھیلی، شان مسعود کی پہلی اننگز شاندار تھی وہ ا?ہستہ ا?ہستہ سیکھتے ہوئے میچور ہو رہے ہیں،عابد علی نے بھی حوصلہ دکھایا، دونوں مستقبل میں پاکستان کے لیے عمدہ کارکردگی دکھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

(جاری ہے)

اسی طرح اظہر علی اور اسد شفیق نی10 برس میں اچھا پرفارم کیا، کبھی کبھار بیٹسمین آوٹ آف فارم بھی ہوتا ہے، انگلینڈ کی کنڈیشنز ہمیشہ مشکل ثابت ہوتی ہیں اس بار بھی بعض بیٹسمینوں کو مسائل کا سامنا کرنا پڑا۔انھوں نے کہا کہ بابراعظم کی کارکردگی دن بدن بہتر ہوتی جا رہی ہے، وہ درست سمت میں گامزن ہیں، بعض اوقات اچھے بیٹسمینوں کو بھی ٹیونگ کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس حوالے سے بابر کو بھی ضرورت محسوس ہوئی تو ضرور ان کے ساتھ کام کروں گا لیکن اس وقت وہ بہترین کھیل رہے ہیں۔محمد یوسف نے کہا کہ میں بیٹسمینوں کی تکنیکی خامیوں کو درست کرنے کے لیے کام کروں گا،سیکھنے کی عمر کبھی ختم نہیں ہوتی جو سیکھنا چھوڑدے پیچھے رہ جاتا ہے، جو کوشش کرے اسے محنت کا صلہ بھی ضرور ملتا ہے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 12/09/2020 - 22:25:53

Your Thoughts and Comments