ہارٹ اٹیک کے بعد بریٹ لی 2 مرتبہ ڈین جونز کی سانسیں بحال کرنے میں کامیاب رہے

جب ڈین جونز کو جان لیوا ہارٹ اٹیک آیا تو بریٹ لی سی پی آر اور بجلی کے جھٹکوں کی مدد سے انکی سانسیں بحال کرنے میں کامیاب ہوئے تاہم سابق آسٹریلوی بلے باز جانبر نہ ہوسکے

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب ہفتہ ستمبر 16:27

ہارٹ اٹیک کے بعد بریٹ لی 2 مرتبہ ڈین جونز کی سانسیں بحال کرنے میں کامیاب ..
ممبئی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 26 ستمبر 2020ء ) آسٹریلیا کے سابق ٹیسٹ کرکٹر بریٹ لی نے ہارٹ اٹیک کے دوران ڈین جونز کی جان بچانے کے لیے بھرپور کوشش کی لیکن وہ کامیاب نہیں ہوسکے۔ بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق جب سابق آسٹریلوی ٹیسٹ کرکٹر اور کمنٹیٹر ڈین جونز ہارٹ اٹیک کا شکار ہوئے تو اس وقت 43 سالہ بریٹ لی 59 سالہ ڈین جونز کے ساتھ ہی موجود تھے۔

واضح رہے کہ پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے اب تک کے تمام سیزنز کا حصہ رہنے والے ڈین جونز بھارتی شہر ممبئی میں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے۔ ڈین جونز بھارتی کرکٹ لیگ آئی پی ایل میں کمنٹری کے لیے ممبئی میں موجود تھے جبکہ ان کے ہمراہ ایک اور سابقہ آسٹریلوی کھلاڑی بریٹ لی بھی تھے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ساتھی کمنٹیٹر بریٹ لی ڈین جونز کے ساتھ ہی موجود تھے اور دونوں نے ایک ساتھ ناشتہ بھی کیا تھا۔

(جاری ہے)

جب ڈین جونز کو جان لیوا ہارٹ اٹیک آیا تو بریٹ لی نے سی پی آر طریقے کی مدد سے ڈین جونز کو بچانے کی بھرپور کوشش کی اور دو مرتبہ ان کی سانسیں بحال کرنے میں کامیاب بھی ہوگئے تاہم سابق آسٹریلوی بلے باز جانبر نہ ہوسکے۔ ڈینو کی موت کرکٹ کے لیے ایک بہت بڑا نقصان قرار دیا جارہا ہے، جب کہ کرکٹ حلقوں کی جانب سے ان کے اہلِ خانہ کے ساتھ اظہارِ یکجہتی بھی کیا جارہا ہے۔                                                                                 

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 26/09/2020 - 16:27:47

Your Thoughts and Comments