بابراعظم نے مجھے جان بوجھ کر بائولنگ نہیں دی: محمد حفیظ

انگلش کاؤنٹی کرکٹ میں غیر قانونی قرار دیے جانے کے بعد میں نے اپنے بولنگ ایکشن کو کلیئر کروالیا تھا: سابق ٹی ٹونٹی کپتان

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب ہفتہ ستمبر 17:29

بابراعظم نے مجھے جان بوجھ کر بائولنگ نہیں دی: محمد حفیظ
لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 26 ستمبر 2020ء ) آل رائونڈر محمد حفیظ نے حال ہی میں اختتام پزیر انگلینڈ کے دورے میں ایک بار پھر بلے سے اپنی صلاحیت ثابت کی، حفیظ نے ٹی ٹونٹی سیریز میں 176.13 کے سٹرائیک ریٹ سے 155 رنز بنائے جن میں 2 نصف سنچریاں شامل تھیں ، پاکستان نے یہ سیریز 1-1 سے برابر کی تھی ۔اگرچہ حفیظ نے اس سیریز میں اپنے ناقدین کو غلط ثابت کیا تاہم انکا خیال ہے کہ وہ اپنی بائولنگ کے ذریعے بھی پاکستانی ٹیم کے کام آسکتے تھے۔

39 سالہ آل راؤنڈر نے ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میں 6.58 کی اوسط سے 54 وکٹیں اپنے نام کررکھی ہیں۔ ماضی میں حفیظ کو اپنے کیریئر کے دوران بائولنگ ایکشن کی قانونی حیثیت کے بارے میں پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا تھا لیکن فی الحال وہ بین الاقوامی کرکٹ میں بائولنگ کروانے کے اہل ہیں ۔

(جاری ہے)

کامران اکمل کے یوٹیوب چینل پر گفتگو کرتے ہوئے حفیظ نے کہا کہ مجھے پچھلے ایک سال سے بین الاقوامی کرکٹ میں باؤلنگ کرنیکی اجازت ہے کیونکہ انگلش کاؤنٹی کرکٹ میں غیر قانونی قرار دیے جانے کے بعد میں نے اپنے بولنگ ایکشن ٹیسٹ کو کلیئر کروالیا تھا۔

انکا مزید کہنا تھا کہ انہوں نےاس سال پاکستان سپر لیگ میں بھی بائولنگ کی اور وہ انگلینڈ کےخلاف سیریز میں بھی بائولنگ کروانے کے لیے دستیاب تھے لیکن بابراعظم نے انہیں گیند بازی کا موقع نہیں دیا، حفیظ کے مطابق اگرچہ میں کپتان کے منصوبے میں نہیں تھا لیکن اسکا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ بائولر کی حیثیت سے میری صلاحیت سے بے خبر ہے۔ مستقبل میں اگر موقع دیا گیا تو بطور باؤلر بھی دستیاب ہونگا۔ محمد حفیظ اس وقت ٹی ٹونٹی فارمیٹ میں اپنے کیریئر کی بہترین فارم سے گزر رہے ہیں اور آف سپن بائولنگ سے بھی کارآمد ثابت ہوسکتے ہیں ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 26/09/2020 - 17:29:42

Your Thoughts and Comments