معین علی نے پاکستانی ٹیم کو بھارت سے زیادہ خطرناک قرار دے دیا

ٹی ٹونٹی ورلڈکپ میں آسٹریلیا، پاکستان اور نیوزی لینڈ کو نظرانداز نہیں کیا جا سکتا :آف سپنر

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب منگل اپریل 14:57

معین علی نے پاکستانی ٹیم کو بھارت سے زیادہ خطرناک قرار دے دیا
لندن (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار ۔ 6 اپریل 2021ء ) انگلش سپنر معین علی کا کہنا ہے کہ یہ کہنا غلط ہوگا کہ اس سال کے آخر میں بھارت میں ہونیوالے آئی سی سی ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ فائنل میں بھارت اور انگلینڈ کے درمیان مقابلہ ہوگا کیونکہ ہم آسٹریلیا، پاکستان اور نیوزی لینڈ جیسی ٹیموں کو نظرانداز نہیں کرسکتے۔ انگلینڈ ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کا ایک اہم دعویدار ہے جبکہ آل راؤنڈر معین علی نے اعتراف کیا کہ این مورگن کی قیادت میں انگلش ٹیم کیلئے ضروری ہے کہ وہ اپنی صلاحیتوں کو مزید بہتربنائے اور نتائج کے بارے میں فکر کرنی چھوڑ دے۔

انہوں نے کہاکہ یہ غلط فہمی ہے کہ ٹونٹی 20 ورلڈکپ کے فائنل میں بھارت اور انگلینڈ کے مابین مقابلہ ہوگا، آپ پاکستان، نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا جیسی ٹیموں کو نظرانداز نہیں کرسکتے ۔

(جاری ہے)

ٹی ٹونٹی ایسا فارمیٹ ہے کہ کوئی بھی کسی بھی حریف کو شکست دے سکتا ہے اور بنگلہ دیش جیسی ٹیمیں بھی بڑی ٹیموں کے لیے خطرناک ہیں، ہم ایک مضبوط ٹیم ہیں لیکن ضروری ہے کہ اپنی صلاحیتوں کا مقابلہ کریں تاکہ اچھے نتائج حاصل کرسکیں ۔

معین علی کا کہنا تھا کہ اگر ہم اپنے اس معیار پر عمل کرتے ہیں جو ہم کرسکتے ہیں، تو ہم کسی کو بھی شکست دے سکتے ہیں۔ یاد رہے کہ گزشتہ مہینے بھارت اور انگلینڈ کے مابین گزشتہ مہینے 5 میچوں کی ٹی ٹونٹی سیریز کھیلی گئی تھی ، انگلینڈ نے پہلے 3 میں سے 2 ٹی ٹونٹی میچز میں کامیابی حاصل کی تھی تاہم بھارتی ٹیم نے آخری 3 میچوں میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے سیریز 3-2 سے اپنے نام کرلی۔ معین علی نے کہا کہ گذشتہ سیریز میں ہم نے بطور ٹیم بہت کچھ سیکھا اور یہ اس وقت فائدہ مند ہوگا جب ہم ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ کھیلنے واپس آئیں گے۔ ٹی ٹونٹی سیریز بہت اچھی تھی کیونکہ دونوں فریقوں نے ایک دوسرے کی طاقتوں اور کمزوریوں کے بارے میں بہت کچھ سیکھا ہوگا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 06/04/2021 - 14:57:42

Your Thoughts and Comments