مصباح الحق کا ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ سے باہر ہونے کے بعد بابر اعظم کی کارکردگی کا جائزہ لینے کا مطالبہ

پاکستان ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ 2024ء میں گروپ مرحلے سے باہر ہوگیا تھا

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب بدھ 10 جولائی 2024 16:42

مصباح الحق کا ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ سے باہر ہونے کے بعد بابر اعظم کی کارکردگی کا جائزہ لینے کا مطالبہ
لاہور (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 10 جولائی 2024ء ) پاکستان کے سابق کپتان مصباح الحق نے T20 ورلڈ کپ 2024ء سے پاکستان کے جلد باہر ہونے کے بعد وائٹ بال کے کپتان بابر اعظم کی کارکردگی کا مکمل جائزہ لینے پر زور دیا ہے۔ مصباح الحق نے اس بات پر زور دیا کہ ٹیم کی ناکامی کی ذمہ داری صرف بابر اعظم کے کندھوں پر نہیں بلکہ ان تمام کھلاڑیوں پر عائد ہوتی ہے جو ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ ٹیم کا حصہ تھے۔

مصباح الحق نے کہا کہ جہاں تک بابر کی کارکردگی کا تعلق ہے ہمیں یہ دیکھنا ہوگا کہ وہ چار سال بعد کہاں کھڑا ہے۔ اس میں صرف کپتان کا قصور نہیں بلکہ بیٹنگ، باؤلنگ اور فیلڈنگ سمیت تمام شعبوں کا قصور وار ہے۔" مصباح الحق نے ٹیم کے کمبی نیشن کا از سر نو جائزہ لینے اور بہتری کے لیے عملی آپشنز تلاش کرنے کی اہمیت کو اجاگر کیا۔

(جاری ہے)

انہوں نے محض نمائش کے لیے تبدیلیاں کرنے کے خلاف خبردار کیا اور کہا کہ اس طرح کی سطحی ایڈجسٹمنٹ ٹیم کی ترقی کے لیے نقصان دہ ہو سکتی ہے۔

مصباح الحق نے مزید کہا کہ "فیصلہ سازوں کو یہ بھی جائزہ لینے کی ضرورت ہے کہ ٹیم مجموعی طور پر کہاں کھڑی ہے اور کون سے سمجھدار آپشنز دستیاب ہیں۔ تاہم اگر تبدیلیاں صرف دکھاوے کے لیے کاسمیٹک وجوہات کی بناء پر کی جا رہی ہیں تو یہ نقصان دہ ہو گی۔‘‘ سابق کپتان نے ٹیم مینجمنٹ اور کپتانی میں بار بار تبدیلیوں کو ورلڈ کپ میں پاکستان کی جدوجہد سے منسوب کرنے پر بھی تنقید کی۔

انہوں نے کہا کہ سیریز کے بعد انتظامیہ اور کپتان کی جانب سے کی جانے والی مسلسل تبدیلیوں نے ہمیں ورلڈ کپ میں نقصان پہنچایا۔ بابر اعظم کی قیادت میں پاکستان نے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں شرکت سے قبل نیوزی لینڈ کے خلاف تین ٹی ٹوئنٹی سیریز اپنے گھر پر اور آئرلینڈ اور انگلینڈ کے خلاف ان کے میدانوں میں کھیلی۔ اس سیریز میں ٹیم کی غیر مستقل کارکردگی کی وجہ سے بنیادی مسائل کی نشاندہی کرنے کے لیے ایک جامع جائزہ لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔
وقت اشاعت : 10/07/2024 - 16:42:04