چیمپئنز ٹرافی ٹرافی نہ کھیلنے کے خدشات پر بنگلہ دیش پریشان

بدھ جولائی 13:41

چیمپئنز ٹرافی ٹرافی نہ کھیلنے کے خدشات پر بنگلہ دیش پریشان

ڈھاکا(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ یکم جولائی۔2015ء) زمبابوے، پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان ہونے والی تین ملکی سیریز کی تصدیق کے بعد بنگلہ دیش نے بین الاقوامی کرکٹ کے شیڈولنگ سسٹم کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔بنگلہ دیش نے ہندوستان کو حال ہی میں تین میچوں پر مشتمل سیریز میں شکست دی تھی جس کے بعد ماضی میں کمزور سمجھے جانے والی ایشین ٹیم نے چیمئنز ٹرافی کے لیے کوالیفائی کرنے کا جشن منایا۔

اس سے قبل بنگلہ دیش نے پاکستان کو بھی تین صفر سے مات دی تھی جس کے بعد آئی سی سی رینکنگ میں اس کی پوزیشن ساتویں ہوگئی ہے اور یہ پاکستان اور ویسٹ انڈیز سے آگے ہے۔میزبان انگلینڈ کے علاوہ دنیائے کرکٹ کی ساتھ دیگر ٹیمیں 2017 میں چیمپئنز ٹرافی میں میں حصہ لیں گی جس کے لیے کوالیفائی کرنے کی آخری تاریخ 30 ستمبر ہے۔

(جاری ہے)

تاہم حال ہی میں ویسٹ انڈیز نے تصدیق کی کہ ان کی ٹیم زمبابوے میں پاکستان اور میزبان ٹیم کے ساتھ تین ملکی سیریز کھیلے گی جس کے بعد بنگلہ دیش کے ٹورنامنٹ سے باہر ہونے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے۔

پاکستان کو سری لنکا کے خلاف پانچ میچوں پر مشتمل ایک روزہ سیریز میں بھی اپنی رینکنگ بہتر بنانے کا موقع ملے گا جو 11 جولائی کو شروع ہوگی۔بنگلہ دیش کرکٹ بوڑد کے ڈائریکٹر جلال یونس نے کہا کہ جب سے آئی سی سی نے ایف ٹی پی کی پیروی کرنا چھوڑدی ہے اور ٹیموں کو باہمی طور پر ڈیل کرنے کی اجازت دی تب سے پورا نظام خراب ہوگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس سے سسٹم میں خامیاں پیدا ہوئیں۔ میں اس کی حمایت نہیں کرتا۔ یہ صحت مندانہ مقابلہ نہیں۔بنگلہ دیش کو اب چیمئنز ٹرافی میں نشست پکی کرنے کے لیے آئندہ ماہ جنوبی افریقہ کے خلاف تین میچوں میں سے کم از کم ایک میچ جیتنا ہوگا

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

وقت اشاعت : 01/07/2015 - 13:41:01

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments