شیکھر دھون نے آئرلینڈ کو دھوڈالا، دفاعی چیمپئن کی 8وکٹوں سے آسان فتح

Shekhar Dhawan Ne Ireland Ko Dhoo Dala

پاکستانی ٹیم کی کوارٹرفائنل تک رسائی آئرلینڈ کیخلاف جیت سے مشروط، اگر مگر کی صورتحال ابھی بھی برقرار

Ejaz Wasim Bakhri اعجاز وسیم باکھری بدھ مارچ

Shekhar Dhawan Ne Ireland Ko Dhoo Dala

کرکٹ ورلڈکپ کا پہلا مرحلہ اپنے اختتام کی جانب سے گامزن ہے ، پول بی میں دفاعی چیمپئن بھارت کی بادشاہت بدستور قائم ہے، بھارتی ٹیم پول میچز میں اب تک ناقابل شکست ہے اور آئرلینڈ کو بھی یکطرفہ مقابلے میں شکست سے دوچار کرکے کوارٹرفائنل اور سیمی فائنل کیلئے حریفوں ٹیموں کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی ہے۔ آئرلینڈ کی بھارت کیخلاف یکطرفہ میچ میں شکست سے آئرش ٹیم کے بارے میں پاکستانی شائقین کو جو خوف تھا وہ بھی ختم ہوگیا ہے۔ آئرش ٹیم بھارت کیخلاف بیٹنگ تو اچھی کرنے میں کامیاب ہوئی لیکن آئرلینڈ کی باؤلنگ بری طرح ایکسپوز ہوگئی اور بھارت نے صرف دو وکٹیں کھوکر ہدف پورا کرلیا۔ 

آئرلینڈ کی بھارت کیخلاف شکست کے باوجود پاکستانی ٹیم کی کوارٹرفائنل تک رسائی یقینی نہیں ہوئی البتہ امکانات مزید روشن ہو گئے ہیں۔

(جاری ہے)

پاکستان کرکٹ ٹیم ایک بار پھر اگر مگر کے گھن چکر میں چکرانے لگی ہے، کوارٹرفائنل تک رسائی یقینی بنانے کے لئے گرین شرٹس کو آئرلینڈ کو ہر حال میں ہراناہوگا۔گروپ بی کی پوائنٹس ٹیبل دیکھی جائے تو پاکستان گروپ میں چھ پوائنٹس کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے اور پاکستان کا نیٹ رن ریٹ اس وقت -0.194 ہے۔ آئرلینڈ بھی پانچ میچز کھیل کر چھ پوائنٹ حاصل کرچکا ہے تاہم -1.014 رن ریٹ کی وجہ سے آئرش ٹیم گروپ میں چوتھے نمبر پر ہے۔ ویسٹ انڈیز پوائنٹ ٹیبل پر پانچویں نمبرپر ہے اور ویسٹ انڈین ٹیم کا رن ریٹ -0.511 ہے، ویسٹ انڈیز کو کوارٹرفائنل تک رسائی کیلئے بہت محنت کرنا ہوگی، آئرش ٹیم کی پاکستان کے ہاتھوں شکست اور ویسٹ انڈیز کی یواے ای کیخلاف بھاری مارجن سے کامیابی کالی آندھی کو کوارٹرفائنل تک لے جاسکتی ہے۔ اگر منفی انداز میں دیکھا جائے تو پاکستانی ٹیم کی آئرلینڈ کیخلاف شکست اور ویسٹ انڈیز کی یواے کیخلاف بھاری مارجن سے کامیابی پاکستانی ٹیم کو گھر واپس بھیج سکتی ہے لیکن اس کے امکانات کم ہیں۔

کرکٹ ورلڈکپ کا کوارٹرفائنل مرحلہ 18مارچ سے شروع ہوگا، انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے پول اے سے نیوزی لینڈ، آسٹریلیا، سری لنکا اوربنگلہ دیش کے کوارٹر فائنل میں رسائی کی تصدیق کی ہے۔تاہم ساتھ ہی کرکٹ کی عالمی تنظیم کا کہنا ہے کہ مشترکہ میزبان آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں کوارٹرفائنل میچ اپنے ہوم گراونڈ میں کھیلیں گی۔ ان کی مخالف ٹیموں کا فیصلہ پول بی کے پوائنٹس ٹیبل پرمنحصرہے۔سری لنکا سڈنی میں اٹھارہ مارچ کو اور بنگلہ دیش کی ٹیم انیس مارچ کو میلبرن گراونڈ پر ایکشن میں نظر آئے گی جبکہ کینگروزبیس مارچ کو ایڈیلیڈ اورکیویز اکیس مارچ کوویلینگٹن میں اپنے حریفوں کا سامنا کریں گے۔ اب تک کے پوائنٹس اور رن ریٹ کی بنا پر پاکستانی ٹیم کوارٹرفائنل میں آسٹریلیا کے مدمقابل ہوگی اور یہ میچ ایڈیلیڈ میں کھیلا جائیگا، بھارتی ٹیم کا کوارٹرفائنل میں بنگلہ دیش سے مقابلہ متوقع ہے ، رن ریٹ کی بنیاد پر پاکستانی ٹیم کو گروپ میں آخری نمبر بھی مل سکتا ہے اور قومی ٹیم آخری نمبر آنے کی وجہ سے سیمی فائنل نیوزی لینڈ کیخلاف کھیلے گی۔اگلے تین سے چار روز میں تمام صورتحال واضح ہوجائے گی اور توقع یہی کی جارہی ہے پاکستان اور آسٹریلیا سیمی فائنل میں مدمقابل ہونگے۔بھارتی ٹیم کی گزشتہ روز کامیابی کا اگر جائزہ لیا جائے تو یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ بھارت نے آئرلینڈ کے غبارے سے ہوا نکال دی ہے۔ سیڈون پارک ہملٹن میں کھیلے گئے میچ میں آئر لینڈ کی ٹیم بھارت کیخلاف 49 ویں اوور میں 259 رنز بنا کر آوٴٹ ہو گئی۔ آئرش اوپنرز نے ٹیم کو 89 رنز کا اچھا آغاز فراہم کیا لیکن اس کے بعد آئر لینڈ کی وکٹیں وقفے وقفے سے گرتی رہیں اور نیل اوبرائن کے علاوہ کوئی بھی بلے باز بھارتی بولرز کا جم کر مقابلہ نہ کر سکا۔ نیل اوبرائن نے 75 رنز کی اننگ کھیلی جب کہ ولیم پورٹر فیلڈ نے 67، پال اسٹرلنگ نے 42 اور اینڈریو بیلبرائن نے 24 رنز کی اننگز کھیلی۔ بھارت کی جانب سے محمد شامی نے 3، روی چندرن ایشون نے 2 جب کہ امیش یادیو، سریش رائنا، موہت شرما اور رویندرا جڈیجا نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔جواب میں بھارت نے 260 رنز کا ہدف 37ویں اوور میں باآسانی 2 وکٹوں کے نقصان پر پورا کرلیا، ہدف کے تعاقب میں بھارتی اوپنرز روہت شرما اور شیکھر دھون دھواں دھار بیٹنگ کی اور کسی بھی آئرش بولر کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے 174 رنز کی شاندار شراکت قائم کی، روہت شرما 66 گیندوں میں 64 رنز کی عمدہ اننگز کھیل کر اسٹورٹ تھومسن کی گیند پر بولڈ ہوئے جب کہ شیکھر دھون نے جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے ورلڈ کپ کی دوسری سنچری اسکور کی اور 85 گیندوں میں 100 رنز بنا کر تھومسن ہی کی گیند پر کیچ آوٴٹ ہوئے۔بھارت کے دونوں اوپنرز کے آوٴٹ ہونے کے بعد ویرات کوہلی اور اجنکیا رہانے نے ٹیم کے اسکور کو آگے بڑھایا اور 37ویں اوور میں ٹیم کو فتح کی دہلیز پار کرادی، ویرات کوہلی 44 اور اجنکیا رہانے 33 رنز بنا کر ناٹ آوٴٹ رہے۔آئرلینڈکی طرف سے سٹیون تھامسن نے دووکٹیں حاصل کیں۔ بہترین بلے بازی پر شیکھر دھون کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

مزید مضامین :

Your Thoughts and Comments