جنوبی افریقہ پھر فتوحات کے ٹریک پر،اپنے آخری راؤنڈ میچ میں یواے ای کو روند ڈالا

South Africa On Winning Track

آج انگلش ٹیم افغانستان کیخلاف مدمقابل ، دونوں ٹیمیں دوسری کامیابی کی خواہشمند بھی پرعزم بھی

Ejaz Wasim Bakhri اعجاز وسیم باکھری جمعہ مارچ

South Africa On Winning Track

اعجازوسیم باکھری

آئی سی سی کرکٹ ورلڈکپ کے میچ میں جنوبی افریقہ نے متحدہ عرب امارات کو باآسانی146رنز سے ہرادیا۔پاکستان کیخلا ف شکست کے بعد جنوبی افریقہ کو کمزور سمجھا جانے لگا تھا لیکن ڈی ویلیئرز الیون ایک بار پھر فتوحات کے ٹریک پر آگئی ہے۔گیارہویں عالمی کرکٹ کپ کا پہلا مرحلہ اختتام کی جانب گامزن ہے، پول اے سے تو نیوزی لینڈ، آسٹریلیا، بنگلہ دیش اور سری لنکا نے کوارٹر فائنل میں جگہ بنالی لیکن پول بی میں اب بھی اگلے مرحلے تک رسائی کیلئے جنگ جاری ہے،مسلسل پانچ فتوحات کے ساتھ پول بی سے بھارت تو کوارٹرفائنل میں پہنچ چکا ہے ، یواے ای کوشکست دیکر جنوبی افریقہ بھی کوارٹرفائنل میں سیٹ پکی کرچکا ہے جبکہ آخری دو سپاٹس کیلئے پاکستان، آئرلینڈ اور ویسٹ انڈیز میں مقابلہ ہے۔

(جاری ہے)

پول بی میں پاکستان اورآئرلینڈ کا میچ بڑی اہمیت اختیارکرگیا ہے،پاک آئرلینڈ میچ ٹائی ہوا، یا بے نتیجہ رہا تو ویسٹ انڈیز ورلڈکپ سے باہرہوجائے گا،میچ میں فتح حاصل کرنے والی ٹیم کوارٹرفائنل میں قدم رکھ دیگی، ہارنے والی ٹیم کی ناک آوٹ راؤنڈ تک رسائی کا دارومدارویسٹ انڈیز یواے ای میچ کے نیتجے پرہوگا، ویسٹ انڈیز جیت گیا تو رن ریٹ سے فیصلہ ہوگا، کالی آندھی کی شکست کی صورت میں آئرلینڈ اور پاکستان آگے بڑھ جائیں گے۔ گزشتہ روز کھیل کے میچ میں جنوبی افریقہ نے متحدہ عرب امارات کو 342 رنز کا ہدف دیا، اے بی ڈی ویلئرزنے 4 چھکوں اور 6 چوکوں کی مدد سے99 رنز کی شاندار اننگز کھیلی،فرحان بہار الدین نے 31 گیندوں پر 64 رنز بنائے،ڈیوڈ ملرنے 49رنز بنائے،متحدہ عرب امارات کی جانب سے محمد نوید نے 3وکٹیں حاصل کیں، متحدہ عرب امارات کی ٹیم 47.3 اوورز میں 195 رنز بنا کر آوٴٹ،پٹیل نے 57 اور انورنے 39رنز بنائے،جنوبی افریقہ کی جانب سے فلینڈر، مورکل اور ڈی ویلییرز نے دو دووکٹیں حاصل کیں،جنوبی افریقی کپتان اے بی ڈی ویلیئرزکو مین آف دی میچ قراردیا گیا۔ ویسٹ پیک سٹیڈیم میں گروپ بی کے میچ میں متحدہ عرب امارات نے ٹاس جیت کر جنوبی افریقہ کو بیٹنگ کی دعوت دی ۔ اننگز کا آغاز جنوبی افریقہ کی جانب سے اسٹار اوپنر ہاشم آملہ اور ڈی کوک نے کیا تاہم دونوں بلے باز زیادہ دیر پچ پر نہ رہ سکے اور آوٴٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔ریلی روسو نے ہاشم آملہ کی جگہ سنبھالی اور 43 رنز کی اننگز کھیل کر مجموعی اسکور کو 94 تک پہنچایا۔کپتان اے بی ڈی ویلئرز اور ڈیوڈ ملر نے ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے 110 رنز کی شراکت قائم کر کے مجموعی اسکور کو 204 رنز تک پہنچا دیا۔اس دوران اے بی ڈی ویلئرزنے 4 چھکوں اور 6 چوکوں کی مدد سے99 رنز کی شاندار اننگز کھیلی۔ڈیوڈ ملر نے بھی 49 رنز بنا کر اچھی کار کردگی کا مظاہرہ کیا۔جنوبی افریقہ کی جانب سے فرحان بہاردین بھی 3 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 31 گیندوں پر 66 رنز کی جارحانہ اننگز کھیل کر نمایا ں بلے باز رہے۔متحدہ عرب امارات کی جانب سے محمد نوید نے 3وکٹیں حاصل کیں جبکہ کامران شہزاد، امجد جاوید اور محمد توقیر 1، 1، 1 بلے باز کو آوٴٹ کرنے میں کامیاب رہے۔جواب میں متحدہ عرب امارات کی ٹیم 47.3 اوورز میں 195 رنز بنا کر آوٴٹ ہو گئی۔متحدہ عرب امارت کی جانب سے پٹیل نے عمدہ بیٹنگ کی اور 100 گیندوں میں 57 رنز بنائے اور آوٴٹ نہیں ہوئے۔متحدہ عرب امارات کی پہلی وکٹ 29 کے مجموعی سکور پر گری جب روس نے بائیں ہاتھ پر ڈائیو مارتے ہوئے مورکل کی گیند پر بیرینجر کا شاندار کیچ پکڑا۔دوسری وکٹ 45 کے مجموعی سکور پر گری جب امجد علی 21 رنز بنا کر ڈومینی کے ہاتھوں آوٴٹ ہوئے۔مورکل نے اپنی دوسری وکٹ خرم خان کو آوٹ کر کے لی۔ خرم نے 12 رنز بنائے۔انور نے اچھا کھیل پیش کیا اور 64 گیندوں میں 39 رنز بنائے ان کو عمران طاہر نے آوٴٹ کیا۔متحدہ عرب امارات کی پانچویں وکٹ 118 کے مجموعی سکور پر گری جب ڈی ویلیئرز کی گیند پر روسو نے کیچ پکڑ کے ثقلین حیدر کو آوٴٹ کیا۔امجد جاوید صرف پانچ رنز بنا کر آوٴٹ ہوئے جبکہ محمد نوید نے 17 رنز سکور کیے۔آٹھویں وکٹ 189 کے مجموعی سکور پر گری جب محمد توقیر تین رنز بنا کر سٹین کی گیند پر بولڈ ہوئے۔جنوبی افریقہ کی جانب سے فلینڈر، مورکل اور ڈی ویلییرز نے دو دو جبکہ سٹین، ڈومینی اور عمران نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔جنوبی افریقی کپتان اے بی ڈی ویلیئرزکو مین آف دی میچ قراردیا گیا۔ آئی سی سی ورلڈکپ میںآ ج دو میچزکھیلے جائیں گے،گروپ اے کی ٹیمیں نیوزی لینڈ اور بنگلہ دیش سیڈون پارک ہملٹن اور انگلینڈ اور افغانستان سڈنی میں مدمقابل ہوں گی۔

مزید مضامین :

Your Thoughts and Comments