بند کریں
اتوار جولائی

مزید مضامین

حالیہ تبصرے

طرق ہنی 22-06-2018 04:22:27

اسلام وعلیکم، آپ کی شائع کردہ ایک تحریر ۱۵ ناکام سٹارٹ اپس سے مندرہ کروڑ تک کا سفر، اس تحریر کو دوبارہ ایڈٹ کر کر کے میں نے اسے اپنے فیس بک گروپ، راہبر پر پوسٹ کیا ہے اگر آپ کو یہ ایڈٹنگ موزوں لگے تو مجھ سے اس کام کے لئے رابطہ کر سکتے ہیں۔ شکریہ

  مضمون دیکھئیے
اویس رضا 30-03-2018 12:41:06

مجھے شامی کے موبائل اچھے لگتے ہیں اور اردو پوائنٹ کی خبریں آسان اور اردو میں ہوتی ہیں، آسان ویپ سائیڈ ہے ٹیکنالوجی ٹپش تیمور میری ویب سائیڈ ہے

  مضمون دیکھئیے
dr anwar kama ch 06-03-2018 15:26:22

very fruit full

  مضمون دیکھئیے
Ar. Tauseef Amjad Meer. 25-01-2018 11:30:55

Its IT Technology day by day improvements, thank you for acknlowdge publicly awareness

  مضمون دیکھئیے
Shafiq rehman 31-08-2017 11:15:33

Agr yh Sach Hai to Boht hii A6i Khabr Hai Agr fake hai to Fitty Muh

  مضمون دیکھئیے
muhammad ather 11-08-2017 14:28:02

mjhe technology sikhne ka bht shok he sir

  مضمون دیکھئیے
فیس بک نے سنیپ چیٹ جیسی لائف سٹیج ایپلی کیشن کو ختم کر دیا
اس ایپلی کیشن کو فیس بک کے 20 سالہ ملازم مائیکل سیمین نے بنایا تھا

فیس بک نے تقریباً ایک سال پہلے آئی او ایس کےلیے لائف سٹیج ایپلی کیشن متعارف کرائی تھی۔یہ ایپلی کیشن ہائی سکول کے طلباء کے لیے بنائی گئی تھی، جس کی مدد سے وہ اپنے کلاس فیلوز کے ساتھ تصاویر اور ویڈیوز شیئر کر سکتے تھے۔فیس بک نے اس ایپلی کیشن کو اب ختم کر دیا ہے۔ اس ماہ کے شروع میں اسے ایپ سٹور سے بھی ہٹا لیا گیا ہے۔


لائف چیٹ کے فنکشن بالکل سنیپ چیٹ کی طرح تھے۔ اسے فیس بک کے 20 سالہ ملازم مائیکل سیمین نے بنایا تھا۔ یہ ایپلی کیشن زیادہ مقبول بھی نہیں ہوئی اور اس کی وجہ سے سیکورٹی کے خدشات بھی بڑھ گئے تھے۔ اس ایپلی کیشن میں تصدیق کا ایسا کوئی ذریعہ نہیں تھا، جس سے پتا چلتا کہ ایپلی کیشن استعمال کرنے والا 21 سال سے کم عمر کا ہےا ور سکول جاتا ہے۔
فیس بک کے پاس سنیپ چیٹ کی طرح کا ایک اور پلیٹ فارم انسٹاگرام سٹوریز بھی ہے۔ جون میں اس کے صارفین کی تعداد 250 ملین سے زیادہ تھی جبکہ سنیپ چیٹ کی ساری یوزر بیس 166 ملین ہے۔ ایسے میں فیس بک کا لائف سٹیج کو ختم کرنا زیادہ برا فیصلہ نہیں ہے۔

یہ خبر اُردو پوائنٹ پر شائع کی گئی۔ خبر کی مزید تفصیل پڑھنے کیلئے کلک کیجئے
تاریخ اشاعت: 2017-08-09

: متعلقہ عنوان

مینوفیکچرر کا نام     :     فیس بک

فیس بک کے مزید عنوان پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

متعلقہ مضامین