بند کریں
اتوار نومبر

مزید مضامین

حالیہ تبصرے

Shafiq rehman 31-08-2017 11:15:33

Agr yh Sach Hai to Boht hii A6i Khabr Hai Agr fake hai to Fitty Muh

  مضمون دیکھئیے
muhammad ather 11-08-2017 14:28:02

mjhe technology sikhne ka bht shok he sir

  مضمون دیکھئیے
Syed Mudasar Hassan Shah 12-06-2017 11:15:24

good news

  مضمون دیکھئیے
الطاف جتوئ 20-03-2017 17:04:55

بھت پسندآئ 90٪

  مضمون دیکھئیے
رمیز احمد 19-01-2017 11:37:14

بہت اچھا فیچر ہے

  مضمون دیکھئیے
Muhammad Qasim 05-08-2016 19:25:31

very nice

  مضمون دیکھئیے
اب دوران ڈرائیونگ نیند آنے پر کار خود ہی ڈرائیور کو جگائے رکھے گی
یہ ٹیکنالوجی 5 سالوں میں گاڑیوں میں موجود ہوگی

جرمن کمپنی باش (Bosch) ایک ایسی کیمرہ ٹیکنالوجی پر کام رہی ہے جو دوران ڈرائیونگ نیند بھری آنکھوں، جسمانی سرگرمیوں اور جسم کے درجہ حرارت کو مانیٹر کرتی رہے گی ۔
بعض اوقات ایسا ہوتا کہ ڈرائیور کی آنکھیں بھی کھلی ہوتی ہیں مگر وہ پھر بھی سو رہا ہوتا ہے۔ ایسی حالت کو مائیکرو سلیپ کہا جاتا ہے۔
نیشنل ہائی وے سیفٹی ایڈمنسٹریشن کے مطابق 2015 میں امریکا میں نیند کی وجہ سے دوران ڈرائیونگ 824 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

اس وقت تمام کار ساز کمپنیاں ڈرائیوروں کو جگائے رکھنے کے لیے مختلف طرح کے مانیٹرنگ سسٹم پر کام کر رہی ہیں۔ مرسیڈیز، آڈی اور والوو وغیرہ میں سٹیئرنگ کی حرکت، ڈرائیونگ ٹائم، سڑک کی حالت اور ڈرائیونگ کی ٹائمنگ کو مانیٹر کرنے کے لیے کئی سسٹم موجود ہوتے ہیں۔ اب انہیں بڑھایا جا رہا ہے۔
باش کے چیف ٹیکنالوجی آفیسر کیتھ سٹرکلینڈ کا کہنا ہے کہ یہ ٹیکنالوجی اگلے پانچ سالوں میں گاڑیوں میں موجود ہوگی۔ کیتھ کے مطابق اگلے قدم پر اس ٹیکنالوجی کو ایسا بنایا جائے گا کہ دوگاڑیاں آپس میں ہی رابطہ کر سکیں اور ایک دوسرے سے نہ ٹکرائیں۔
فرانسیسی کمپنی والوو بھی اسی طرح کا مانیٹرنگ سسٹم بنا رہی ہے۔

یہ خبر اُردو پوائنٹ پر شائع کی گئی۔ خبر کی مزید تفصیل پڑھنے کیلئے کلک کیجئے
تاریخ اشاعت: 2017-03-18

متعلقہ مضامین