بند کریں
منگل مئی

مزید مضامین

حالیہ تبصرے

الطاف جتوئ 20-03-2017 17:04:55

بھت پسندآئ 90٪

  مضمون دیکھئیے
رمیز احمد 19-01-2017 11:37:14

بہت اچھا فیچر ہے

  مضمون دیکھئیے
Muhammad Qasim 05-08-2016 19:25:31

very nice

  مضمون دیکھئیے
Tauseef Amjad Meer 01-08-2016 14:55:22

I strongly recommended Samsung Assembling & Fabrication Units in Pakistan.

  مضمون دیکھئیے
Obair Amjad Mir 01-08-2016 14:49:42

It is not use able in Pakistan, Samsung Management should also lunch & manufacturing in Pakistan .

  مضمون دیکھئیے
Ahtesham Makhdoom 30-07-2016 16:37:17

EXCELLENT

  مضمون دیکھئیے
فلائٹ میں ہیڈفون کی بیٹری پھٹنے سے عورت کا چہرہ جھلس گیا
بیٹری پھٹنے کا یہ واقعہ 19 فروری کو آسٹریلیا سے چین جانے والی پرواز میں پیش آیا تھا

فروری کے مہینے میں میلبورن، آسٹریلیا سے بیجنگ، چین جانے والی فلائٹ میں ایک عورت ہیڈفون لگائے سو گئی اور ایک دھماکے کی آواز سن کر فوراً ہی اٹھ گئی۔اصل میں اس کے کانوں سے لگے ہیڈ فون کی بیٹری پھٹنے سے اس میں آگ گئی تھی۔ آسٹریلین ٹرانسپورٹ سیفٹی بیورو نے اس حادثے کی تحقیقاتی رپورٹ منگل کو شائع کی تھی۔
حادثے سے متاثر ہونے والی عورت کی تصویر میں اس کے چہرے، گالوں اور گردن پر جلنے کے نشانات واضح طور پر دیکھے جا سکتےہیں۔

عورت کا کہناہے کہ اس نے اپنا چہرہ پکڑا تو ہیڈ فون اس کے گردن کے گرد آ گیا تھا۔
سڈنی مارننگ ہیرالڈ کے مطابق یہ حادثہ 19 فروری کو پیش آیا۔ آسٹریلین ٹرانسپورٹ سیفٹی بیورو نے اخبار کو پھٹنے والے ہیڈ فون کا برانڈ بتانے سے انکار کر دیا ہے۔
عورت کا کہنا ہے کہ ہیڈ فون پھٹنے کے بعد اس نے اسے اتار کر فرش پر پھینک دیا۔ اس کی جلد میں جلن ہو رہی تھی مگر پھر بھی اس نے پاؤں سے جلتے ہوئے ہیڈ فون کی آگ بجھانے کی کوشش کی۔

اسی اثناء میں فلائنٹ اٹنڈنٹ بھی پانی کی بالٹی لے آئے اور ہیڈ فون پر لگی آگ بجھائی گئی۔عورت کا کہنا ہے کہ سارے سفر کے دوران لوگ کھانستے رہے۔ آسٹریلین ٹرانسپورٹ سیفٹی بورڈ کے مطابق پگھلے ہوئے ہیڈفون اور بیٹری کی وجہ سے جہاز کا فرش بھی متاثر ہوا۔
جہازوں میں بیٹری پھٹنے کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے۔ اس سے پہلے ہوور بورڈ اور سام سنگ گلیکسی نوٹ 7 کی بیٹری پھٹنے کے باعث جہازوں پر ان کے لانے پر پابندی بھی عائد کی جا چکی ہے۔

یہ خبر اُردو پوائنٹ پر شائع کی گئی۔ خبر کی مزید تفصیل پڑھنے کیلئے کلک کیجئے
تاریخ اشاعت: 2017-03-15

: متعلقہ عنوان