نوشہروفیروز،دو افراد انسانی اسمگل کا شکار،روزگار کا جھانسہ دیکر ایران لیجاکر قید کردیا تشدد کی ویڈیو وائرل،30لاکھ تاوان کا مطالبہ

نوشہروفیروز(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 23 جنوری2022ء)نوشہروفیروز کے نواحی علاقے سے تعلق رکھنے والے دو افراد انسانی اسمگل کا شکارہوگئے، روزگار کا جھانسہ دیکر ایران لیجاکر قید کردیاگیا،تشدد کی ویڈیو وائرل ہوگئی،مغویوں کے غریب اہل خانہ سے 30 لاکھ روپے تاوان کا مطالبہ کیاگیاہے۔تفصیلات کے مطابق ملک میں بڑھتی ہوئی بے روزگاری کے سبب پکاچانگ کے قریبی علاقہ کرونڈی سے تعلق رکھنے والے دو نوجوان ایڈوکیٹ افتخار سومرو اور طاہر مغل روز گار کی تلاش میں انسانی اسمگلروں کے ہتھے چڑھ گئے۔

انسانی اسمگلروں نے انہیں روزگار کی جھانسہ دیکر ایران میں زنجیروں میں جکڑ کر قید کردیا اور تشدد کی ویڈیو بناکر مغویوں کے اہل خانہ کو بھیج کر رہائی کیلئے 30 لاکھ روپے تاوان کا مطالبہ کردیا ۔

(جاری ہے)

مذکورہ تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہوگئی۔ویڈیومیں دیکھا جاسکتاہے کہ دونوجوانوں کو اغوا کار تشدد کا نشانہ بنارہے ہیں اور مغوی اپنے اہل خانہ سے مسلسل 30 لاکھ روپے تاوان بھرنے کا مطالبہ کررہے ہیں۔

اور کہہ رہے ہیں کہ اگر ہمیں بازیاب نہیں کرایاگیاتو اغوا کار ہمیں جان سے مار ڈالیں۔ جب صحافیوں نے مغویوں کے اہل خانہ سے بات کرنے کی کوشش کی تو انہوں نے بات کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہاکہ اگر ہم نے میڈیا سے بات کی تو مغوی ہمارے بچوں کو جان سے مار ڈالیں گے۔ دوسری جانب علاقہ مکینوں نے پاک فوج،عدلیہ اور حکومت سے انکی رہائی کیلئے مدد کی اپیل کی ہے۔