چینی کمپنی نے اپنے عملے کو سزا کے طور پر پیشاب پینے اور کاکروچ کھانے پرمجبور کر دیا

چینی کمپنی نے اپنے عملے کو سزا کے طور پر پیشاب پینے اور کاکروچ کھانے ..
انٹرنیٹ پر وائرل ہونےو الی ایک ویڈیو میں چینی کمپنی کو اپنے عملے کے ساتھ انتہائی گھٹیا ترین سلوک کرتے دکھایا گیا ہے۔ فروخت کے ہدف کو پورا نہ کرنے پر اس کمپنی نے اپنے عملے کو پیشاب پینے پر مجبور کر دیا۔
یہ ویڈیو جنوب مغربی چین کے صوبے  گوئیژو کے شہر زونئی کی ڈیکوریشن کمپنی کے آفس میں بنائی گئی ہے۔ کمپنی کی انتطامیہ نے عملے کو صرف  پیشاب پینے پر ہی مجبور نہیں کیا بلکہ انہیں مزید بے عزت کرنے کےلیے کاکروچز بھی کھلائے۔

(جاری ہے)


وائرل ویڈیو میں دو افراد کو کپ میں پیلا محلول اٹھا کر پیتے دکھایا گیا ہے، اس دوران دیگر ملازمین کو زدوکوب کرتے بھی دکھایا گیا ہے۔
کمپنی کے ایک سابق ملازم نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ وہاں پر حالات شروع میں کافی بہتر تھے۔ اس کے بعد کمپنی نے ایک موٹیویشنل سپیکر کی خدمات حاصل کر لیں، جس کے بعد حالات خراب ہوگئے۔ کمپنی میں ملازموں کو سزا کے طور پر گنجا بھی کر دیا جاتا ہے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ کمپنی کی انتظامیہ میں سے تین افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔ واقعے کی تفتیش جاری ہے۔
چینی کمپنی نے اپنے عملے کو سزا کے طور پر پیشاب پینے اور کاکروچ کھانے ..
وقت اشاعت : 07/11/2018 - 23:42:13

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments