مارشل آرٹس کے ناول پڑھنے کے شوقین اپنا شوق پورا کرنے کے لیے پہاڑوں میں رہنے لگے

Ameen Akbar امین اکبر جمعہ نومبر 23:28

مارشل آرٹس کے ناول پڑھنے کے شوقین اپنا شوق پورا کرنے کے لیے پہاڑوں میں ..

ووشیا (مارشل آرٹس ) ناول اور فلمیں چین میں بہت زیادہ مقبول ہیں۔ کچھ لوگ تو بس یہ ناول اور فلمیں دیکھ لیتے ہیں جبکہ کچھ لوگ اس کے تجربات خود پر کرنے کے لیے حد سے گزر جاتے ہیں۔


جن یونگ کو  تاریخ  کا سب سے مقبول ووشیا مصنف  سمجھا جاتا ہے۔اس کے ناول چین اور دوسرے ممالک  میں کافی مقبول ہیں۔ اُن کے ناول کئی دوسری زبانوں میں ترجمہ ہو چکے ہیں۔

ان کی ناولوں پر کئی فلمیں اور ٹی وی سیریز بن چکی ہیں۔اُن کی فلمیں دیکھ کر بہت سے  لوگ کرداروں کی نقل کرتے ہوئے اپنی جان سے ہاتھ بھی دھو بیٹھے ہیں۔

جن یونگ کی کہانیاں پڑھ کر پہاڑوں میں رہنے اور مارشل آرٹس کی مشق کرنے کا  پہلا کیس اس سال مارچ میں سامنے آیا تھا۔ 


رپورٹ کے مطابق 20 سالہ شیاؤہاؤ بچپن سے ہی جن یونگ کے ناولوں کے شوقین ہیں۔

(جاری ہے)

اُن کا جنون اس قدر بڑھا ہے کہ انہوں نے پہاڑوں میں رہائش اختیار کر لی ہے تاکہ وہیں پر رہ کر مارشل آرٹس کی  مشق کریں اور افسانوی ہیرو بن جائیں۔

شیاؤ باؤ پہاڑوں پر رہ کر نیزہ بازی اور غیر مسلح لڑائی جیسے باکسنگ اور کنگ فو کی مشق کرتے ہیں۔ جب وہ مشق نہیں کرتے تو اس وقت ووشیا ناول پڑھتے ہیں۔

سوال پیدا ہوتا ہے کہ شیاؤ باؤ یہ سب کچھ اپنے گھر پر کیوں نہیں کرتے۔

اس کا جواب بظاہر ایسا معلوم ہوتا ہے کہ  جدید زندگی کے ہنگاموں میں  وہ اپنی مشق کی طرف مکمل توجہ مرکوز نہیں کر سکتے۔ کہانیوں کے ہیرو کی طرح مارشل آرٹس کا ماہر بننے کے لیے وہ سمجھتے ہیں کہ انہیں پہاڑوں پر ہی  اپنی مشق جاری رکھنی چاہیے۔

شیاؤ باؤ  وہ واحد انسان نہیں، جنہوں نے  مارشل آرٹس کا ہیرو بننے کے لیے  انسانی آبادی کو چھوڑا ہو۔

اس سال ستمبر میں چینی میڈیا نے خبر دی تھی کہ ووشیا کا چاہنے والا تائی نامی  ایک چینی شخص بھی مارشل آرٹس کا ہیرو بننے کے لیے پہاڑوں پر رہنے لگا ہے۔ جن یونگ کے ناول پڑھ کر حقیقی زندگی میں خود کو ہیرو سمجھنے والے تائی کی ملازمت بھی اسی وجہ سے چلی گئی تھی۔تائی نے تو پہاڑوں میں ایک گڑھا بھی کھودا تھا۔یہ گڑھا ایک قدیم معبد کی مانندہے ، جہاں بیٹھ کر  کہانی کے ہیرو یانگ گوؤ نے اپنی محبت کو پایا تھا۔


ٹوئٹر کے چینی ورژن ویبو پر وائرل ہونے والی تائی کی تصاویر میں انہیں جن یونگ کے ناول پڑھتے اور  فاتحانہ انداز میں فضا میں مکا لہراتے دکھایا گیا ہے۔ شیاؤ باؤ کی طرح تائی کی زندگی کا خواب بھی ووشیا ہیرو بننے کا ہے۔انہیں امید ہے کہ  اسی جگہ  اُن کی ملاقات جنگجو حسینہ سے بھی ہو گی۔

وقت اشاعت : 08/11/2019 - 23:28:20

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments