خود کو پائلٹ ظاہر کرکے جہاز میں جلدی سوار ہونے والا شخص گرفتار

Ameen Akbar امین اکبر جمعرات نومبر 23:57

خود کو پائلٹ ظاہر کرکے جہاز میں جلدی سوار ہونے والا شخص گرفتار

ہوائی جہاز کے پائلٹوں کو جہاز میں جلدی سوار ہونے اور سیکورٹی چیک  نہ کرانے جیسی کئی طرح کی  سہولیات  مل سکتی ہیں۔ ہوائی جہاز کے پائلٹ دوسری ائیرلائنز کی  پروازوں میں بھی اِن سہولیات کو حاصل کر سکتے ہیں۔
پائلٹوں کو حاصل اس سہولیات سے فائدہ اٹھانے کے لیے ایک بھارتی شخص  نے کئی بار   پائلٹ کی وردی میں  سفر کیا لیکن آخر کار پکڑا ہی گیا۔


48 سالہ راجن ماہبوبانی نیو دہلی کی ایک مشاوراتی کمپنی کے مالک ہیں۔ انہیں مختلف پیشہ  ور افراد کی وردیاں پہن کر ٹِک ٹاک ویڈیو بنانے کا بھی شوق ہے۔راجن 15 بار ہوائی سفر میں پائلٹ بن کر جا چکے ہیں۔ ان دوران انہیں پائلٹوں کو حاصل سہولیات جیسے سیٹ اپ گریڈ کرانا، سٹاف کا وی آئی پی برتاؤ کرنا اور کاک پٹ میں تصویر بنوانا وغیرہ حاصل رہی ہیں۔

(جاری ہے)


حال ہی میں راجن کو اندرا گاندھی انٹرنیشنل ائیر پورٹ سے گرفتار کیا گیا ہے۔وہاں انہوں نے ائیر انڈیا کی پرواز میں  کولکتا جانے کے لیے خود کو جرمن ائیرلائن لفتھینسا کو پائلٹ ظاہر کیا تھا۔جب ائیر انڈیا نے لفتھینسا کے دفتر میں فون کر کے تصدیق کی تو جرمن ائیر لائن نے اپنی ایک ٹیم کو موقع پر ہی تصدیق کے لیے بھیج دیا۔نفتھنیسا کے عملے سے سامنا ہونے پر راجن نے  جعلی پائلٹ ہونے کا اعتراف کرلیا۔


بظاہر ایسا لگتا ہے کہ راجن سیکورٹی سے بچنے کے لیے بہت بار پائلٹ کی وردی میں سفر کر چکے ہیں۔راجن نے پولیس کو بتایا کہ انہوں نے لفتھینسا ائیر لائن کے  پائلٹ کی وردی اور شناختی کارڈ بنکاک سے بنوایا تھا۔ انہوں نےبتایا کہ وہ مختلف وردیاں پہن کر یوٹیوب اور ٹِک ٹاپ ویڈیو بناتے ہیں۔دوران تفتیش پولیس کو اُن کی کرنل کی وردی سمیت کئی محکموں کی وردیوں میں تصاویر ملیں۔پولیس ابھی راجن سے تفتیش کر رہی ہے۔ ابھی تک معلوم نہیں ہو سکا کہ اُن پر کن کن دفعات کے تحت مقدمہ قائم کیا گیا ہے۔


وقت اشاعت : 21/11/2019 - 23:57:48

Your Thoughts and Comments