بند کریں
خواتین مضامین100 نامور خواتینبی بی فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا نیشاپوری

مزید 100 نامور خواتین

پچھلے مضامین - مزید مضامین
بی بی فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا نیشاپوری
بی بی فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا خراسان کے شہر نیشا پور کی رہنے والی تھیں۔ آپ کو معرفت الٰہی میں اعلیٰ مقام حاصل تھا

بی بی فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا خراسان کے شہر نیشا پور کی رہنے والی تھیں۔ آپ کو معرفت الٰہی میں اعلیٰ مقام حاصل تھا ان کے فضائل کا اعتراف کرنے والوں میں حضرت بایزیر بسطامی رحمتہ اللہ علیہ اور ذوالنون مصری رحمتہ اللہ علیہ جیسے بلند پایہ بزرگ شامل ہیں۔
خانہ کعبہ کی خدمت کرنے اورعبادت الٰہی کی خاطر آپ طویل عرصہ تک بیت اللہ میں مقیم رہیں۔ اس دورمیں بڑے بڑے علمائے کرام اوراولیا اللہ نے ان سے فیض اٹھایا۔ ان کو قرآن پاک کی تفسیر بیان کرنے میں کمال حاصل تھا۔ عبادتِ الٰہی میں مستغرق رہتی تھیں، اکثر ساری ساری رات نوافل میں گزار دیتیں۔
آپ نے زندگی بھر شاید ہی کبھی پیٹ بھر کر کھایا ہو۔ عقیدت مند بہترین ملبوسات اور کھانے پیش کرتے لیکن ان چیزوں کو غریبوں اور حاجت مندوں میں تقسیم کر دیتیں، خود معمولی قسم کا کھانا کھاتیں اور معمولی قسم کا لباس زیب تن کرتیں۔
وہ لوگوں کو اس بات کی نصیحت و تلقین کیا کرتی تھیں کہ تمہارا ہر کام اللہ کی رضا کے لئے ہونا چاہیے اور ایسا کرتے وقت تمہیں اس بات کا یقین ہونا چاہیے کہ اللہ تمہیں دیکھ رہا ہے۔ تمہارے ہر عمل میں خلوص کا ر فرما ہونا چاہیے۔
حضرت بایزید بسطامی رحمتہ اللہ علیہ ان کے فضائل وکمالات کے اس حد تک معترف تھے کہ ان کا کہنا تھا کہ میں نے آج تک جس مسئلہ پر بھی بی بی فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا نیشاپوری سے بات کی، ان کو پہلے سے ان بات سے آگاہ پایا۔
آپ زندگی پھر اگر سفر کرتیں تو بیت المقدس اور مکہ معظمہ کا کرتیں۔ ان دنوں شہروں کے درمیان ہی آپ نے ہمیشہ سفر کیا۔
عالم اسلام کی اس عظیم خاتون نے 223 ہجری میں وفات پائی۔

(6) ووٹ وصول ہوئے