بند کریں
خواتین مضامین100 نامور خواتینسیدہ فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا ام الخیر

مزید 100 نامور خواتین

پچھلے مضامین - مزید مضامین
سیدہ فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا ام الخیر
آپ حضرت عبدالقادر جیلانی رحمتہ اللہ علیہ کی والدہ تھیں۔ نہایت پاکباز، عابدہ ، زاہدہ اور خدا رسیدہ خاتون تھیں۔

سیدہ فاطمہ رحمتہ اللہ علیہا ام الخیر
والدہ حضرت عبدالقادر جیلانی رحمتہ اللہ علیہ
آپ حضرت عبدالقادر جیلانی رحمتہ اللہ علیہ کی والدہ تھیں۔ نہایت پاکباز، عابدہ ، زاہدہ اور خدا رسیدہ خاتون تھیں۔ ان کی شادی ابوصالح جنیگی دوست کے ساتھ ہوئی ۔ وہ بھی نہایت متقی بزرگ تھے۔ سیدہ فاطمہ سے ان کی شادی ایک کڑی آزمائش سے گزرنے کے بعد ہوئی جس کا تذکرہ اگرچہ دلچسپ ہے لیکن یہاں اس کی گنجائش نہیں۔
471 ھ میں حضرت عبدالقادر رحمتہ اللہ علیہ پیدا ہوئے۔ حضرت عبدالقادر ابھی کمسن ہی تھے کہ سایہ پدری سے محروم ہو گئے۔ سیدہ فاطمہ نے ان کی پرورش میں نہایت حوصلے اور صبر سے کام لیا اور اپنے چار یا پانچ سال کے بیٹے کی بھر پور تربیت کی اور انہیں ہمیشہ سچ بولنے کی ایسی تلقین کی جو حضرت عبدالقادر جیلانی نے ہمیشہ کے لئے اپنے دل پر نقش کر لی۔
اس نقش کا اثر تھا کہ اس ننھی سی عمر میں شیخ عبدالقادر جیلانی نے ڈاکووٴں کے سردار کے سامنے سچ بول کر اسے اپنا مطیع بنا لیا اور اسے توبہ کرنے پر مجبور کر دیا۔
سیدہ فاطمہ نے اپنے لخت جگر کو اعلیٰ تعلیم کے لیے خود سے جدا کر کے دور دراز علاقوں میں بھیجنے سے بھی گریز نہ کیا۔ آپ کے بارے میں تاریخ خاموش ہے کہ آپ کی وفات کب اور کہاں ہوئی لیکن اس میں کوئی شک نہیں کہ آپ دنیا کی بہترین ماوٴں میں سے ایک تھیں۔

(1) ووٹ وصول ہوئے