بند کریں
خواتین مضامینخوبصورتیابروؤں کو سنوارنے کے چند مزید مشورے

مزید خوبصورتی

پچھلے مضامین - مزید مضامین
ابروؤں کو سنوارنے کے چند مزید مشورے
ابرو کے بال کبھی اوپر سے نہ نکالیں،ایسا کرنے سے ابرو مصنوعی لگتے ہیں۔البتہ ابرو کے نیچے سے نکالیں
ابروؤں کو سنوارنے کے چند مزید مشورے
۱۔ابروؤں کے بالوں کو گہرا رنگ دینے یا ان کی رنگت ہلکی کرنے کے لیے کبھی سرکے بالوں کو رنگنے والا خضاب یا کلر کریم وغیرہ استعمال نہ کریں اور نہ کسی بلیچنگ لوشن کو ابروؤں پر لگائیں۔
۲۔ابرو کے بال کبھی اوپر سے نہ نکالیں،ایسا کرنے سے ابرو مصنوعی لگتے ہیں۔البتہ ابرو کے نیچے سے نکالیں تو آنکھ اور ابرو کا درمیانی فاصلہ بڑھ جاتا ہے۔اس سے آنکھیں بڑی اور پلکیں لمبی لگتی ہیں۔
۳۔ابرو کے بال کبھی قینچی یا ریزر سے نہ تراشیں بلکہ بہتر یہی ہے کہ ایک ایک کرکے موچنے سے نکالے جائیں۔بال نکالنے سے پہلے ابرو پر کولڈ کریم لگالیں تاکہ بال نکالتے وقت جلد کو زیادہ تکلیف نہ ہو۔
چشمہ اور آنکھیں:چشمہ آنکھوں کے لیے ایک خوبصورت نقاب ہیں ا ور اس کا استعمال کسی حد تک آنکھوں کے لیے مفید بھی ہے۔سیاہ چشمہ آنکھوں کو دھوپ اور تیز روشنی کی چمک سے بچاتا ہے۔انہیں گردو غبار دھوپ اور تیز ہوا سے محفوظ رکھتا ہے،
روشنی کی تیز شعاعوں سے بچاؤ کے لیے پولرائزڈ(Polarised) چشمے مفید ہیں۔ان میں ایک خاص طرح کا شیشہ لگایا جاتا ہے،جس کے استعمال سے سورج کی حدت اور تکلیف دہ روشنی کم ہوجاتی ہے،مگر کار چلاتے ہوئے پولرائزڈ چشموں کا استعمال روزانہ اور طویل عرصے کے لیے کیا جائے تو آنکھوں کی بینائی کو نقصان پہنچتا ہے۔

(0) ووٹ وصول ہوئے