بند کریں
خواتین مضامینخوبصورتیافزائش حسن کے چند مشورے

مزید خوبصورتی

پچھلے مضامین - مزید مضامین
افزائش حسن کے چند مشورے
بچے کی پیدائش کے بعد اکثر خواتین کے جلد پڑ دھبے پڑ جاتے ہیں۔یہ دھبے جسم میں آئرن اور وتامن سی کی کمی پیدا ہوتے ہیب
افزائش حسن کے چند مشورے:
۱ ۔بچے کی پیدائش کے بعد اکثر خواتین کے جلد پڑ دھبے پڑ جاتے ہیں۔یہ دھبے جسم میں آئرن اور وتامن سی کی کمی پیدا ہوتے ہیں۔ایسی صورت میں اپنے ڈاکٹر کے مشورے سے ائرن کے انجکشن لگوانے چاہئیں۔اس کے ساتھ ہی اپنی غذا کا خیال رکھنا چاہیے۔نہار منہ شہد اور لیموں کا رس پانی میں ملاکر پینا چاہیے۔جب کہ دوپہر کو ایک گلاس تازہ پھل کا رس اور رات کو سونے سے پہلے ایک گلاس دودھ پئیں۔اس کے علاوہ یوگا کی کچھ ورزش بھی چہرے کے داغ مٹانے کے لیے مفید ہیں۔مثلاً سرونگا آسن،سرس آسن،سیلبتھ آسن ،گورش آسن،دھنور آسن،ہل آسن وغیرہ،ورزش کرنے کی فرصت نہ ہونے کی صورت میں صبح آنکھ کھولتے ہی بیڈ پر پڑے پڑے یہ ورزش کریں۔
۲۔ چہرے پر چھوٹے چھوٹے سرخ دانے نکلنے کی صورت میں چہرہ ڈیٹول سوپ سے دھولیں اور کیلا مائیں لوشن لگائیں۔
۳۔چہرے اور پیوٹو کی سوجن جسم میں کسی تیزابی مادے کی موجودگی یا کسی الرجی کی وجہ سے بھی ہوسکتی ہے۔اس کے لیے اپنا خون اور پیشاپ ٹیسٹ کروائیں۔
۴۔ وہ خواتین جن کے چہرے کی جلد بہت چمکتی ہو اور خالص طورپر صبح کے وقت ماتھے اور ناک پر اتنی چکنائی ہوتی ہو جیسے خوب تیل ملا ہوا ہوں میک آپ کریں تو تھوڑی دیر بعد چکنائی سارا میک اپ خراب کردیتی ہووہ خواتین ہفتے میں تین بار کھیرے کے رس کا ماسک لگائیں۔صابن سے منہ دھوئیں اور کسی قسم کی کریم نہ لگائیں۔منہ دھو کر اسٹرنجنٹ یا ویلوا سموتھ لوشن لگایا کریں۔جس میں چکنائی کم ہوں۔دن میں ایک بار ٹسی لیمن کلینر ز سے کلینزنگ کریں۔ایک لیمن کا رس روزانہ پئیں۔
۵۔جن خواتین کی آنکھوں کے گرد سیاہ حلقے ہوں۔وہ عرق لیموں میں روغن چنبیلی کے چند قطرے ملا کر رات کو سونے سے پہلے آنکھوں کے ارد گرد ہلکا مساج کرلیں۔
۶۔ جن خواتین کے چہرے پر سفید دھبے ہوں وہ ملٹی وٹامنز (Multi.Vitamins) استعمال کیا کریں۔کیونکہ چہرے پر سفید دھبے جسم میں حیاتین کی کمی کی علامت ہیں۔
۷۔ جن خواتین کے چہرے کی جلد بہت چکنی ہو اور اس کے مسامات کھلے ہوں وہ اپنے چہرے پر کھیرے کے رس کا ماسک لگایا کریں۔اس کا طریقہ یہ ہے کہ کھیرے کو دھوکر چھیلیں،پھر اسے رگڑ لیں۔یاد رہیں کہ کدو کش صاف ستھرا ہو اور رگڑا ہوا کھیرا بھی ساف برتن میں ڈالیں۔اب اسے ململ کے کپڑے سے چھان لیں۔پہلے اپنا چہرہ بیسن سے دھوئیں اور خشک کرکے روئی کی مدد سے کھیرے کا رس سارے چہرے پر لگائیں۔آدھے گھنٹے بعد چہرے کو ٹھنڈے پانی سے دھوئیں۔چہرہ خشک کرکے کافور ملا عرق گلاب چہرے پر لگائیں۔کسی قسم کی چکنی کریم استعمال نہ کریں۔لیکن وینشنگ کریم لگانے میں کوئی ہرج نہیں ہے۔
۸۔ جس خواتین کے چہرے پر دانے مواد سے بھر جاتے ہیں اور میک اپ کرنے سے دانے مزید بڑھ جاتے ہیں وہ کٹی کیورا میڈیکٹیڈ سوپ سے چہرہ دھوئیں۔میک اپ کے لیے الزبیتھ آرڈن کا تیار کردہ ویلوا سموتھ اور سوونگ لوشن استعمال کریں۔ اگر ان کی رنگت سفید ہے تو وہ الزبیتھ آرڈن کا روز ریشل(Rose Rachel) شیڈ لگائیں اوت اگر سانولی رنگت ہے تو سپورٹ ڈارک (Spot Dark) شیڈ مناسب رہے گا ۔رات کو سونے سے پہلے میک اپ ضرور صاف کرلیں۔
۹۔جن خواتین کی جلد چکنی ہو اور گرمیوں میں چہرہ بہت چکنا ہوجاتا ہوں مگر سردیوں میں رخسار خشک رہتے ہوں وہ گرمیوں میں موسچرائزر یا بیولے قطعاً استعمال نہ کریں۔البتہ کلینزنگ ملک سے جلد کو اچھی طرح صاف کرکے صابن اور سادہ پانی سے منہ دھوئیں۔برف کے پانی سے چہرے پر چھینٹے ماریں اور چہرے کو خشک کرکے روئی کے پھاہے سے اسٹرنجنٹ لگائیں،ایسی خواتین بلش یا آرڈینا سکن ٹانک بھی استعمال کرسکتی ہیں جوکہ دراصل اسٹرنجنٹ سکن ٹانک (Skin Tonic) کا دوسرا نام ہے۔وہ سردیوں میں اپنے رخساروں پر بیولے لگا سکتی ہیں۔ان خواتین کے لیے میک اپ کا چارٹ درض ذیل ہے:
فاؤنڈیشن،الیوژن،پیچ بلش،کریم روج،فریگائل، پاؤڈر،ان وزیبل ویل،نیچرل بلش آن،کارویل نمبر ۴،آئی لائنز،بائینڈنگ براؤن،(بھورے رنگ کی آنکھوں کے لیے) یا بلیک مسکارا،لپ سٹک کورل کوٹا۔
۱۰۔ جن خواتین کے چہرے پر سیاہ دانے نکلتے ہیں وہ اپنے چہرے کو مندرجہ ذیل طریقوں سے تیار کئے گئے ابٹن سے دھویا کریں۔
بیسن ۸ اونس۔
جوکا آٹا ۸اونس۔
بادام کی کھلی ۸ اونس۔
اراروٹ کا آٹا ۴ اونس۔
علاوہ ازیں گلیسرین کو باریک پیس کر اس کا ایک اونس پاؤڈر مندرجہ بالا اشیاء میں شامل کرلیں۔یہ سیاہ دانوں کے لیے بہت مفید ابٹن ہے۔
ہفتے میں ایک بار اندے کی سفیدی میں ایک چھوٹا چمچ شہد ملاکر پھینٹیں پھر اسے محلول کی روئی کے پف سے چہرے پر لگائیں۱۵۔۲۰ منٹ بعد یہ ماسک اتارنے کے لیے چہرہ دھوئیں اور خشک کرکے عرق گلاب میں کافور کا سفوف ملا کر لگائیں۔
۱۱۔ چہرے پر کالے تلوں کو ختم کرنے کا کوئی علاج نہیں ہے ماسوائے اس کے کہ چہرے پر پلاسٹک سرجری سے نئی جلد لگوائی جائے۔
۱۲۔چہرے پر ہمیشہ چکناہٹ رہنا ہاضمے کی خرابی اور بدپرہیزی کی علامت ہے۔خوراک سادہ اور ذود ہضم کھائیں ۔گھی اور انڈے کا استعمال کم کردیں۔ملائی مکھن اور دودھ کا استعمال معمولی طور پر کیا جاسکتا ہے جبکہ دہی بھی مفید ہے ہاضمے کی کمزوری اور پیٹ صاف نہ رہنے پر پانی کا زیادہ استعمال ضروری ہے،اس صورت میں ایک دن میں اٹھ دس گلاس پانی پینا چاہیے۔نارنگی مالٹے ،سنگترے،اور لیموں کا استعمال کھانے کے ساتھ ضرور کرنا چاہیے ۔پھل اور سبزیاں کھانے سے جلد کی چکناہٹ دور ہوتی ہے۔
۱۳۔۔ بے خوابی اعصابی تناؤ اور ذہنی پریشانی سے چہرے پر جھریاں نمودار ہوجاتی ہیں۔
۱۴۔۔عمر کے اثرات کو چہرے سے دور رکھنے کا ایک ہی طریقہ ہے کہ چہرے کی رگوں کو تازہ خون مہیا کرنے کی تدبیر کی جائے۔
۱۵۔نظام ہضم میں خرابی چہرے کو بڑی جلدی متاثر کرتی ہیں اور اس سے آنکھیں بے رونق اور جلد داغ دار ہوجاتی ہیں ۔قبض بھی چہرے کی چمک دمک کی دشمن ہے ۔اس سے بھی چہرے پر داغ دھبے نمودار ہونے لگتے ہیں۔لہذا بدہضمی اور قبض سے بچیں۔

(0) ووٹ وصول ہوئے