بند کریں
خواتین مضامینفن و ادببی بی لیلیٰ خانم

مزید فن و ادب

- مزید مضامین
بی بی لیلیٰ خانم
بی بی لیلیٰ خانم کو ترکی کی سب سے بڑی شاعرہ قرار دیا جاتا ہے۔
بی بی لیلیٰ خانم کو ترکی کی سب سے بڑی شاعرہ قرار دیا جاتا ہے۔ آپ نے ترکی کی شاعری کو ایک نئی اور آسان جہت دی جس کی آج تک پیروی کی جاتی ہے۔
آپ کا تعلق پچھلی صدی ہجری سے ہے۔ آپ قسطنطنیہ میں پیدا ہوئیں۔ آپ کے والد کا نام قاضی عسکرمدل زادہ حامد آفندی تھا۔ آپ کے بھائی کو اپنے دور کا ملک الشعر ء کہا جاتا تھا۔ شاعری میں انہوں نے اپنے بھائی کی ہی شاگردی اختیار کی۔ بھائی کی وفات پر آپ نے ان کا درد ناک مرثیہ لکھا۔
آپ کی شادی کمسنی میں ہی ہوگئی تھی لیکن بد قسمتی سے اپنے شوہر کے ساتھ آپ کی نہ بن سکی اور شادی طلاق پر منتج ہوئی۔ طلاق سے پہلے آپ کو نہایت تلخ حالات سے گزرنا پڑا۔ ان تجربات نے آپ کے ذہن پر گہرے اثرات مرتب کئے جس کی جھلک آپ کی شاعری میں نظر آتی ہے۔
لیلیٰ خانم کی ذہانت اور فطانت بے مثال تھی۔ حاضر جوابی میں آپ کا کوئی ثانی تھا۔ آپ کا زیادہ تر وقت فکر شعر وسخن میں گزرتا تھا۔ عمر کے آخری حصہ میں آپ تصوف کی طرف مائل ہوگئیں اور مولانا روم کی عقیدت مند مولویہ درویشوں میں شمولیت اختیار کر لی۔
ترکی کا مشہور مصلح فواد پاشا آپ کا بھتیجا تھا۔ آپ کا کلام کئی بار چھپ چکا ہے۔ آپ کی مناجات اور مرثیوں کی ترکی بھر میں دھوم مچی رہی ہے۔ دنیا میں جہاں جہاں ترکی زبان سمجھنے ولاے موجود ہیں، وہاں آپ کا کلام پڑھا اور پسند کیا جاتا ہے۔
آپ نے 1848 ء میں انتقال کیا اور غلطہ کی خانقاہ مولویہ میں دفن ہوئیں۔

(0) ووٹ وصول ہوئے