Chaton Par Bani Aik Masnoi Si Chhat - Home Interior & Decoration - Ghar Ki Aaraish

چھتوں پر بنی ایک مصنوعی سی چھت - گھر کی آرائش

جمعرات 23 ستمبر 2021

Chaton Par Bani Aik Masnoi Si Chhat
آپ نے متعدد بار فالز سیلنگ دیکھی ہوں گی۔لوگ اپنے چند کمروں جن میں لاؤنج اور ڈرائنگ روم شامل ہوتے ہیں۔ایسی جدت سے چھتوں کو آراستہ کرتے ہیں کہ عام سے گھر محل نما دکھائی دیتے ہیں۔
یہ وضع دار چھت لکڑی کی بنائی جائے یا کنکریٹ اور اینٹوں سے ہر زاویئے سے خوبصورت دکھائی دیتی ہے۔اگر یوں کہا جائے کہ یہ مصنوعی چھت کسی بھی مکان یا فلیٹ کی مخصوص فن تعمیر کی انفرادیت اور جمالیات کو ظاہر کرتی ہے تو غلط نہ ہو گا۔

کراچی میں میمن کمیونٹی خاص طور پر اپنے جدید گھروں میں فالسز سیلنگز کرواتے ہیں۔یہ شاندار لکڑی اور پتھریلے میٹریل سے ان چھتوں کو ایک نئی زندگی عطا کر دیتے ہیں۔اس کے بعد دیواری آرائش کے لئے قد آدم آئینے یا آیات ربانی کے طغرے اور خطاطی کے نمونے فریم کرکے لگواتے ہیں۔

(جاری ہے)

یوں ان گھروں کی سجاوٹ مکینوں کے بجٹ اور ذوق کو ظاہر کرتی ہے۔
بہت شروع میں ہمارے طویل القامت دیواروں کی تعمیر ہوا کرتی تھی۔

ان اونچی اونچی چھتوں کا مقصد صرف یہی سمجھ میں آتا تھا کہ ان میں رہائش اختیار کرنے والے سورج کی تپش سے محفوظ رہ سکیں۔تب بھی اس وقت کی نئی نسل انفراسٹرکچر کی خامیوں کو چھپانے کے لئے فالسز سیلنگ کرواتی تھی۔اس کے پیچھے چھت پر نظر آنے والے مختلف پائپ،بجلی کی تار وغیرہ چھپا دیئے جاتے تھے۔
جدید رجحانات کے بعد اب مختلف سائز،رنگوں اور مٹیریل کی مدد سے فالسز سیلنگ بنائی جاتی ہے۔

پلاسٹر آف پیرس زیادہ مفید ہے جبکہ لکڑی میں دیمک لگنے کا خدشہ موجود ہے اس کی مناسب دیکھ بھال ہوتی رہنی چاہئے۔ان دونوں طرز آرائش سے مکان میں دلکشی بڑھ جاتی ہے۔
آج کل فالسز سیلنگز میں چھتوں پر برقی قمقمے لگائے جاتے ہیں۔اب دیواروں پر آرائشی بلب لگانے کا رجحان خال خال ہی نظر آتا ہے۔ فانوس بہرحال اب بھی وسطی چھت پر نصب کئے جاتے ہیں مگر کچھ لوگ صرف ڈرائنگ روم میں یہ آرائش کرتے ہیں۔

لاؤنج میں لگائے جانے والے فانوس قدرے سادہ اور دھاتی مٹیریل سے بنے ہوتے ہیں جن میں جیو میٹریکل زاویہ استعمال ہوتا ہے۔
فالسز سیلنگ کی سطح
یہ آپ کے ذوق انتخاب پر منحصر ہے کہ آپ پیچیدہ ڈیزائن کی سیلنگ چاہتے ہیں یا مستطیل اور مربع نما سادہ چھت بہتر خیال کرتے ہیں۔ مزدوروں کو باور کرائیں کہ سیلنگ کی سطح ہموار اور صحیح بنائیں۔

اگر اس کی سطح ٹھیک نہیں ہو گی تو فنشنگ خراب ہو گی۔خیال رہے کہ سیلنگ کی پلیٹس بھی ایک سطح میں ہونی چاہئیں۔وہ کہیں سے ابھری اور کہیں سے ڈھکی ہوئی نہ ہوں تو بہتر ہے۔بعض مزدور سمجھتے ہیں کہ یہ خالی رنگ و روغن کے بعد درست ہو جاتی ہیں وہ غلطی پر ہیں کیونکہ ہموار سطح لابی یا رنگنے سے ٹھیک نہیں ہوا کرتی۔کچھ مزدور یا کاریگر وقت بچانے یا اپنے کام میں مہارت نہ ہونے کی وجہ سے چھت میں اسٹیل کے کیل ٹھونک کر فالسز سیلنگ کو Support فراہم کرتے ہیں یہ طریقہ کار درست نہیں بلکہ خطرناک ہوتا ہے۔

اس طرح وقتی طور پر تو اسٹیل کے کیل فالسز سیلنگ کو اُٹھا لیتے ہیں مگر وقت کے ساتھ ساتھ یہ کمزور پڑ جاتے ہیں اس طرح پلیٹس گرنے کا امکان رہتا ہے۔سیلنگ کا کام کرنے والے یہ طے کر لیں کہ ڈرل مشین سے چھت میں کم از کم ڈیڑھ یا دو انچ کے سوراخ کرکے بیچ والے نٹ اور راول بولٹ لگائے جائیں اور یہ سپورٹ بھی 15 انچ سے زیادہ دور نہیں ہونی چاہئے کیونکہ یہ جتنے کم فاصلے پر ہو گی اتنا ہی بہتر ہو گا۔
تاریخ اشاعت: 2021-09-23

Your Thoughts and Comments

Special Home Interior & Decoration - Ghar Ki Aaraish article for women, read "Chaton Par Bani Aik Masnoi Si Chhat" and dozens of other articles for women in Urdu to change the way they live life. Read interesting tips & Suggestions in UrduPoint women section.