Poode Lagain Gher Mehkain - Home Interior & Decoration - Ghar Ki Aaraish

پودے لگائیں گھر مہکائیں - گھر کی آرائش

ہفتہ ستمبر

Poode Lagain Gher Mehkain
راحیلہ مغل
برسات کا موسم ہے۔اس موسم میں بند کمروں میں عجیب سی Smellمحسوس ہوتی ہے۔اس کے علاوہ دھوپ کی شدت بھی تیز ہوتی ہے جو انسان کی طبیعت پر گراں گزرتی ہے۔ ایسے میں گھر میں لگائے گئے تازہ پودے جہاں آپ کی طبیعت کو خوش کرتے ہیں وہیں کمروں کی Smell کو بھی ختم کرتے ہیں۔اس آرٹیکل میں ہم آپ کو ایسے پودوں کے بارے میں بتائیں گے جنہیں لگا کر آپ اپنا گھر اور موڈ بہت خوبصورت بنا سکتی ہے۔

دراصل پہلے زمانے میں جو گھر بنائے جاتے ہیں ان کے درمیان میں ایک بڑا سا صحن ہوتا تھا۔جس کی وجہ سے کمروں میں تازہ ہوا اور مناسب روشنی آتی تھی تاہم اب چونکہ بند گھروں کا فیشن ہے۔جدید طرز کے گھر بھی اس طرح بنائے جا رہے ہیں کہ ان میں صحن برائے نام ہی رکھے جاتے ہیں۔

(جاری ہے)


بند گھروں کی وجہ سے ان میں تازہ ہو انہیں گزرتی یہی وجہ ہے کہ ان میں ایک عجیب سی مہک محسوس ہوتی ہے۔

یہ مہک عموماً گھر کے مکینوں کو تو محسوس نہیں ہوتی تاہم اگر باہر سے کوئی اندر داخل ہوتو اسے ضرور محسوس ہوتی ہے۔ویسے تو گھر میں بھینی بھینی خوشبو پھیلانے کے لئے کئی ایئر فریشنر بھی بنائے گئے ہیں۔تاہم ان میں موجود کیمیکلز سے اکثر خواتین ڈرتی ہیں ان کا کہنا ہے کہ گھر میں چھوٹے بچے موجود ہیں ایسا نہ ہو کہ یہ ان کے لئے نقصان دہ ثابت ہوں اور انہیں سانس لینے میں دشواری ہونے لگے۔

ایسے میں آپ کو جند پھولوں کے پودوں کے لگانے کے مشورے دیتے ہیں جنہیں لگا کر آپ کے گھر میں ہریالی بھی نظر آئے گی بدبو بھی ختم ہو گی اور گھر سے بھینی بھینی خوشبو آئے گی۔
چنبیلی Jasminum Polyanthumکے نام سے بھی مشہور ہے۔یہ پھول اگر کمروں میں رکھے جائیں تو خوشبو پورے گھر میں محسوس ہوتی ہے۔سفید سوس جسے Peacealilyکے نام سے بھی یاد کیا جاتا ہے اس کا پودا بھی اگر گھر میں رکھا جائے تو بھینی بھینی مہک پھیلاتا ہے۔

یہ پودا گھروں میں با آسانی لگایا جا سکتا ہے۔آرکڈ کو بھی کمروں میں خوشبو پھیلانے کی غرض سے رکھا جا سکتا ہے یہ آسانی سے گھروں میں پائے جانے والے انڈور لانٹس جو ساتھ ہی خوشبو بھی پھیلاتے ہیں۔اس کے علاوہ یہ بھی حقیقت ہے کہ پودے روئے زمین کا حسن ہی نہیں بلکہ زمین کی ہر چیز کو فطرتی حسن و جاذبیت سے مزین کرتے ہیں اگر زمین پر پودے نہ ہوتے تو ہماری یہ دنیا ایک گردو غبار‘ اجاڑو بیابان خطہ سے زیادہ کچھ نہ ہوتی۔

نہ یہاں سبزے کی ہریالی ہوتی نہ گلہائے رنگ برنگ کی کونپلیں رکھتیں۔بلکہ ہر طرف خاک اڑ رہی ہوتی۔ جب پودے اور ہریالی ہی نہ ہوتی تو خوبصورت پرندوں کی پیاری پیاری آوازیں ہمیں کہاں سے سنائی دیتیں؟
پودے ہمیں تازہ آکسیجن ہی فراہم نہیں کرتے بلکہ ہماری زندگی کی بنیادی ضرورتیں انہی پودوں اور درختوں کے ذریعے حاصل ہوتی ہیں جلانے کے لئے ایندھن ہو یا ضروریات کے لئے لکڑی کا حصول کھانے کے لئے قسم قسم کے مزیدار پھل‘ماحول کو مزین کرتے حسن پھول‘ پودوں سے کشید کردہ نباتاتی اجزاء‘حتیٰ کہ جانوروں کی خوراک کے لئے چارے کا حصول‘ان سب کے لئے حضرت انسان کا انحصار کلیتاً پودوں پر ہے۔

سچ تو یہ ہے کہ اگر زمین پر پودے نہ ہوتے تو انسان کا دنیا میں رہنا انتہائی دشوار اور تکلیف دہ ہوتا۔یہاں سانس لینا دشوار ہو جاتاہے۔پودے نہ صرف ماحول کو آلودگی سے بچاتے ہیں بلکہ آکسیجن پیدا کرکے فضا کو مضر مادوں سے بھی پاک کرتے ہیں اسی لئے پودوں کو ”زمین کے پھیپھڑے“ کہا جاتا ہے۔پودے قدرت کا حسین تحفہ ہیں۔ان کے ذریعے ہمیں جسمانی آسائشوں کے ساتھ ساتھ ذہنی فرحت و انبساط اور سکون حاصل ہوتا ہے۔پودے انسانی زندگی کے لئے لازم و ملزوم ہیں۔
تاریخ اشاعت: 2020-09-05

Your Thoughts and Comments

Special Home Interior & Decoration - Ghar Ki Aaraish article for women, read "Poode Lagain Gher Mehkain" and dozens of other articles for women in Urdu to change the way they live life. Read interesting tips & Suggestions in UrduPoint women section.