Thori Si Mehnat Aur Ujle Hue Bartan - Gharelu Totkay

تھوڑی سی محنت اور اُجلے ہوئے برتن - گھریلو ٹوٹکے

پیر 18 اکتوبر 2021

Thori Si Mehnat Aur Ujle Hue Bartan
Stainless Steel(بے داغ اور اُجلے) برتنوں کی بہترین صفائی کیسے ممکن ہے؟
ہم سب خواتین اپنے باورچی خانوں میں صفائی کے ساتھ ساتھ بے داغ اور اُجلے برتن استعمال کرنا چاہتی ہیں بعض اوقات چھوٹے چھوٹے مسائل کسی وجہ سے درد سر بن جاتے ہیں۔آپ بڑی دعوت سے فارغ ہوتی ہوں اور آپ کی میڈ (ماسی) اس وقت موجود نہ ہو یا روزانہ کے برتنوں کی صفائی آپ خود کرتے جا رہی ہوں تو کن امور کا خیال رکھیں گی۔

آیئے جاننے کی کوشش کریں۔
ہلکے نشانات اور داغوں کی صفائی کے لئے سنک میں گرم پانی بھر کر دو یا تین قطرے لیکویڈ ڈش واشنگ (مائع صابن) کے ڈال دیں۔کچھ دیر رہنے دیں۔اس پانی میں اسفنج بھگو کر برتنوں کو رگڑ لیں۔یہ اب تک نرم ہو چکے ہوں گے اور برتن جلد صاف ہو جائیں گے۔
اگر نشانات بہت ہی گہرے ہوں تو تھوڑا سا زیتون کا تیل اسفنج پر مل کر اسفنج سے رگڑا جا سکتا ہے۔

(جاری ہے)

آپ کے برتن پہلے جیسے چمک دار ہو جائیں گے۔
دیگچی کے جل جانے کے نشانات کانٹے یا چھڑی سے رگڑ کر صاف کرنا صحیح نہیں ہو گا داغ والی جگہ پر تھوڑا سا سرکہ ڈال دیں۔اسفنج کے نرم والے حصے اسے صاف کر لیں۔بہت زیادہ ضدی داغ ہو تو سرکہ لگا کر تھوڑی دیر رکھا رہنے دیں پھر پانی سے اسے دھو لیں اور خشک کپڑے سے صاف کر لیں۔
بہت سخت داغوں کو صفائی کے لئے بیکنگ سوڈا بھی استعمال کرنا اچھا ہے۔

تھوڑے سے پانی میں سوڈا ملا کر داغ والی جگہ پر لگا دیں۔30 منٹ تک انتظار کر لیں پھر اس کے بعد گیلے اسفنج سے اسے صاف کر لیں۔بہتر یہی ہوتا ہے کہ پکانے کا کام جیسے ہی مکمل ہو جائے یا کھانے کے بعد بچے ہوئے کھانے کو ایئر ٹائٹ کنٹینر میں محفوظ کرکے دیگچیاں دھو کے رکھ لی جائیں۔فریج میں دیگچیاں نہ رکھیں تو اچھا ہے۔تمام ایسے کیمیائی ڈٹرجنٹ یا صابن جو ہاتھوں پر الرجی کر سکتے ہوں نہ استعمال کرنا بہتر ہے۔مارکیٹ میں مائع اور ٹکیہ کی شکل میں بے ضرر صابن موجود ہیں جن کے لئے بہت زیادہ کھولتا ہوا پانی بھی استعمال کرنا ضروری نہیں۔برتنوں کی صفائی کے دوران ڈس پوزیبل دستانوں کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے۔کچن کا کام ختم ہو جانے پر ہاتھوں پر موئسچرائزر لگا لینا بھی درست ہے۔
تاریخ اشاعت: 2021-10-18

Your Thoughts and Comments

Special Gharelu Totkay article for women, read "Thori Si Mehnat Aur Ujle Hue Bartan" and dozens of other articles for women in Urdu to change the way they live life. Read interesting tips & Suggestions in UrduPoint women section.