Sar Ki Malish K Zirye Baloon Ki Hifazat

سر کی مالش کے ذریعے بالوں کی حفاظت

پیر نومبر

Sar Ki Malish K Zirye Baloon Ki Hifazat

اس بات میں شک کی گنجائش نہیں کہ آپ کو اپنے بالوں کی بہت فکر ہے اُنہیں خوبصورت اور چمک دار بنانا چاہتی ہیں اس سلسلے میں معمولاً جو وقت آپ صرف کرتی ہیں اگر اس میں تھوڑا سا اضافہ کر لیا جائے تو آپ کا یہ مقصد با آسانی اور خوش اسلوبی سے حاصل ہو سکتا ہے یہاں اس بات کو مد نظر رکھنا چاہیے کہ تندرست سر کی کھال اور چمکدار بالوں کیلئے چند متعینہ اُصولوں کی پابندی ضروری ہے ۔

بالوں کی صفائی، بالوں کی جڑوں کو روزانہ کوئی صحت بخش غذا بہم پہنچانا ،سرکی مالش اور ذہنی اعتبار سے مطمئن اور خوش وخرم رہنا ان باتوں پر عمل درآمد نہ صرف بالوں کے حسن اور ان کی دل کشی ہی کو قائم رکھتا ہے بلکہ ان کی بدولت بالوں پر رُونما ہونے والی عمر کی زیادتی یا جلد کی بیماریوں کے اثرات کو بھی ختم کیا جا سکتاہے۔

(جاری ہے)


بالوں کی صحت مندی کیلئے مناسب طریقے پر روزانہ سر کی مالش کراتے رہنا بھی بے حد ضروری ہے ۔

خواہ آپ اس کی ضرورت محسوس کریں یا نہ کریں۔لیکن اگر بالوں کے حسن کو قائم رکھنا ضروری ہے تو اس کیلئے سر کی مالش بھی لازمی ہے۔اگر مالش مناسب انداز میں کی جائے تو اس کا نتیجہ توقع سے بھی زندہ زیادہ نکلتاہے۔مالش کے بہترین اوقات صبح بیدار ہونے کے بعد اور شب کو بستر پر لیٹنے سے پہلے ہیں ۔مالش کی بدولت چونکہ مقامی خون آزادی کے ساتھ گردش کرتا ہے اس لیے سر کی مالش سر کیلئے سکون بخش ثابت ہوتی ہے باقاعدگی کے ساتھ روزانہ پانچ منٹ کی مالش نہ صرف بالوں کو ایک نئی زندگی بخش دیتی ہے بلکہ اس کی بدولت بالوں کی تعداد اور خوبصورتی میں بھی اضافہ ہوتاہے ۔


علاوہ ازیں یہ مقامی جلد کیلئے ورزش کی حیثیت بھی رکھتی ہے۔مالش انگلیوں کے پوروں سے کرنی چاہیے۔انگلیوں کو بالوں میں ڈال کر انہیں سختی کے ساتھ اس طرح حرکت دینا چاہیے کہ ان کے ساتھ سر کی جلد بھی حرکت کرنے لگے۔اور اس عمل کو بار بار دہرانا چاہیے۔حتی کہ دوران خون کے باعث کھو پڑی پر سرخی کی جھلک نظر آئے۔اور تھکے ہوئے عضلات سکون محسوس کرنے لگیں۔

مالش کے نتائج کو زیادہ خوش گوار بنانے کیلئے مالش سے پہلے سر پرروغن بادام یا سر پر لگانے کے کسی اور تیل کے چند قطرے ڈال لینے چاہئیں۔اس طرح ایک طرف بالوں کی چمک میں اضافہ ہوتاہے اور دوسرے بال ٹوٹنے سے محفوظ رہتے ہیں ۔اور اس طرح مالش کرنا مقامی نظام،نظام اعصاب پر خوش گوار اور حیرت انگیز اثر ڈالتاہے سرکی مالش کے بعد بالوں میں برش اور کنگھی کرلینا چاہیے۔

یہ عمل مالش کی خوش گوار اثرات میں صرف اضافہ ہی نہیں کرتا بلکہ مقامی خون کی گردش پر بھی بہت اچھا اثر ڈالتا ہے اور بال زیادہ نرم اور چمک دار ہوجاتے ہیں۔
مالش سر کی خشکی دور کرنے کا بھی ایک یقینی ذریعہ ثابت ہوتی ہے اور تجربات سے یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ معمولی مالش بھی سر کی خشکی کے شدید ترین مرض کو بھی دور کر دیتی ہے۔اس سلسلے میں مالش کرنے کا طریقہ یہ ہے کہ پہلے سر کے بالوں کو پھیلا یا جائے ۔

اور اس کے بعد انگلیوں کی پوروں سے مالش کی جائے۔لیکن ایسی صورت میں سر کو سختی کے ساتھ نہیں رگڑنا چاہیے۔اور دن میں دو تین مرتبہ مالش کرنی چاہیے اور اگر اس مرض سے نجات پانا مقصود ہوتو مالش کے وقت بالوں کیلئے قوت بخش کوئی نباتاتی روغن یا مفید ادویہ کے اجزاء کا کوئی مرکب بھی استعمال کرنا چاہیے۔
بالوں کے گرنے کی صورت میں مالش بے حد مفید ثابت ہوتی ہے اور خواہ بال کتنی ہی کثرت سے کیوں نہ گرتے ہوں،مستقل طور پر مالش کرتے رہنا انہیں گرنے سے روک دیتا ہے یہاں یہ بات بھی ذہن نشین کرلینی چاہیے۔

کہ سر میں اعصاب کے جس قدر مرکز موجود ہیں۔اگران میں کوئی نقصان پیدا ہو جائے تو بالوں پر اس نقص اثر ضرور پڑتاہے ۔لیکن ان اعصاب کی مستقل مالش چوں کہ بالوں کو اپنی قوت بحال کرنے میں مدد دیتی ہے اس لیے بال گرنا بند ہو جاتے ہیں اور چونکہ مالش سے مقامی خون گردش صحیح ہو جاتی ہے اس لیے بالوں کو ایسی غذا بہم پہنچتی ہے جو انہیں مضبوط بناتی ہے اور اگر آپ خود بھی سرکی مالش کا تجربہ کریں تو آپ کو اندازہ ہو سکے گا۔کہ سادہ عمل بالوں کے لیے کس قدر مفید ہے۔

تاریخ اشاعت: 2019-11-04

Your Thoughts and Comments

Special Hair Care, Hair Color & Hair Styling article for women, read "Sar Ki Malish K Zirye Baloon Ki Hifazat" and dozens of other articles for women in Urdu to change the way they live life. Read interesting tips & Suggestions in UrduPoint women section.