Chehray Aur Gardan Ka Massage

چہرے اور گردن کا مساج

Chehray Aur Gardan Ka Massage

صحت اور خوبصورتی کے لیے مساج کی اہمیت کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا کیونکہ مساج کرنے کا عمل صدیوں سے مروج ہے۔اگر آپ اس غلط فہمی کا شکار ہیں کہ مساج کرنے کی وجہ سے آپ کے چہرے پر نمودار ہونے والی جھریاں اور لکیریں یکسر غائب ہو جائیں گی تو یہ آپ کی خام خیالی ہو گی۔لیکن ہم آپ کو یہ نوید ضرور سنا سکتے ہیں کہ مساج کرنے کی وجہ سے آپ کے چہرے پر نمودار ہونے والی جھریاں اور لکیریں مزید نشوونما پانے سے محروم ہو جائیں گی اور اس کے علاوہ آپ کی جلد پہلے کی نسبت زیادہ ہموار نظر آگی اور اس میں تناؤ بھی پیدا ہو گا جو آپ کو جوان دکھانے میں معاون ثابت ہوگا۔


مساج کے دوران آپ اپنے چہرے پر کسی قدر مواسچرائزر بھی لگا سکتی ہیں ۔اس کے علاوہ مساج جیل بھی لگایا جا سکتا ہے ۔

(جاری ہے)


اگر آپ مساج سے خاطر خواہ فائدہ حاصل کرنے کی متمنی ہیں تب آپ مساج کے ہر ایک مرحلے کو کم از کم تین بار دہرائیں ۔آپ اس سے زائد مرتبہ بھی دہراسکتی ہیں اور اس میں کوئی مضائقہ نہیں ہے۔ اس کے علاوہ مساج کرنے کے لیے اپنے دونوں ہاتھوں کی بڑی انگلیوں کے ساتھ مخصوص مقامات کو بھی دبائیں اور اس دباؤ کو کم از کم نصف منٹ تک بر قرار رکھیں اوردبانے کے عمل کو بھی تین بار دہرائیں ۔


واضح رہے کہ بہت زیادہ دباؤ ڈالنے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ آپ جانتی ہیں کہ چہرے کی جلد جسم کے دیگر حصوں کی جلد کے مقابلے میں زیادہ نرم ونازک ہوتی ہے ۔اس لیے اس کے ساتھ نرم ونازک انداز سے ڈیل کریں ۔
پیشانی اور کن پیٹوں کے مساج کے مختلف مراحل
لکیریں عام طور پر سب سے پہلے آپ کی پیشانی ہی کو نشانہ بناتی ہیں ۔
انگلیوں پر کسی قدر موائسچرائزر یا جیل لگائیں ۔


دونوں ہاتھوں کی درمیانی اور چھوٹی انگلیاں اپنی بھنوؤں کے درمیان رکھیں ۔
اپنی انگلیوں کو نیچے سے اوپر کی جانب اور اوپر سے نیچے کی جانب حرکت دیں ۔
آپ کی یہ حرکت یہ ظاہر کررہی ہو جیسے آپ اپنی پیشانی کی شکنوں کو ہموار کررہی ہیں ۔
اپنی کن پیٹوں پر نرم دباؤ ڈالیں۔
اس عمل کی وجہ سے آپ کے چہرے کے وہ عضلات نرم پڑ کر سکون سے ہمکنار ہوں گے جو تناؤ کا شکار تھے ۔


اگر آپ ایسی سر درد میں مبتلا ہیں جو ذہنی دباؤ ۔کھچاؤ۔اور تناؤ کا نتیجہ ہے تب آپ اسی عمل سے استفادہ کرتے ہوئے اس قسم کی سر درد سے بھی نجات حاصل کر سکتی ہیں ۔
آپ نے جن مقامات پر نرمی کے ساتھ دباؤ ڈالنا ہے انہیں تصویر میں نمایاں کیا گیا ہے ۔
آنکھوں اور ناک کے مساج کے مراحل
دونوں ہاتھوں کی تیسری انگلیوں کے ساتھ دائرے کی صورت میں آنکھوں کے گرد مساج کریں ۔


اس عمل کی بدولت آنکھوں کے گرد ظاہر ہونے والی باریک باریک لکیروں سے نجات حاصل ہو گی۔
مساج کا آغاز اپنی بھنوؤں کے اندرونی گوشے سے کرتے ہوئے اپنی انگلیوں کی پیش قدمی آنکھوں کے اندرونی گوشوں تک کریں ۔
واضح رہے کہ انگلیوں کا دباؤ از حد نرم اندا ز کا حامل ہو نا چاہیے۔
تصویر میں جن مقامات کی نشاندہی کی گئی ہے ان پر ہلکا پھلکا دباؤ ڈالیں ۔


یہ مقامات بھنوؤں پر واقع ہونے کے علاوہ آنکھوں کے نیچے عین درمیان میں واقع ہوتے ہیں ۔
اپنے ہاتھوں کی دونوں بڑی انگلیوں کے ذریعے اپنی ناک کے دونوں طرف مساج کریں ۔
اس کے بعد ناک کے دونوں پہلوؤں کا بھی مساج کریں ۔
واضح رہے کہ اس عمل کے دوران آپ کی انگلیوں دائرے کی شکل میں حرکت کریں۔
اپنی ناک کے نتھنوں کے دونوں طرف اپنی انگلیوں کے ساتھ مخصوص مقامات پر ہلکا پھلکا دباؤ ڈالیں ۔


رخساروں اورمنہ کے دہانے کے مساج کے مراحل
اپنے رخساروں کے مساج کے لیے ہاتھوں کی درمیانی اور تیسری انگلیاں بروئے کار لائیں ۔
ان انگلیوں کی حرکت لہروں کی مانند ہونی چاہیے۔
مساج کا آغاز اپنی ٹھوڑی سے کریں ۔
اپنی انگلیوں کو کانوں کو لوؤں تک لائیں ۔
منہ کے گوشوں سے آغاز کرنے کے بعد کانوں تک لائیں۔
ناک سے آغاز کرنے کے بعد کن پیٹوں تک لائیں۔


کانوں کے نیچے مخصوص مقامات پر ہلکا پھلکا دباؤ ڈالیں جیسا کہ تصویر میں دکھایا گیا ہے۔
ٹھوڑی کے درمیان سے آغاز کریں۔
اپنی بڑی انگلیوں کے پوروں کے ذریعے منہ کے دہانے کے گرد مساج کریں ۔
واضح رہے کہ انگلیوں کی حرکت نیچے سے اوپر کی جانب ہونی چاہیے۔
منہ کے دہانے کے گرد
اوپر والے ہونٹ کے عین درمیان ہیں ۔
نچلے ہونٹ کے نیچے ٹھوری پر
چہرے کے درج بالاحصوں پر مخصوص مقامات پر ہلکا پھلکا دباؤ ڈالیں۔


تصویر میں یہ مقامات بخوبی دکھائے گئے ہیں۔
ٹھوڑی اور گردن کے مساج کے مختلف مراحل
اپنے انگوٹھے اور انگشت شہادت کی چٹکی بنائیں۔
اپنی اس چٹکی کے ذریعے اپنے جبڑے کے کنارے تاٹھوڑی کے وسط تک کی جلد کو آہستہ آہستہ دبائیں۔
جبڑے کے کنارے سے اس عمل کو شروع کرتے ہوئے ٹھوڑی کے درمیان تک آئیں اور مابعد اسی طریقے سے جلد کو چٹکی بھرتے ہوئے واپس جبڑے کے کنار ے تک جائیں ۔


جبڑے کے دائیں سے بائیں جانب اپنے ہاتھ کی ہتھیلی نرمی کے ساتھ پھیریں۔
اس کے بعد جبڑے بائیں سے دائیں جانب اپنے دوسرے ہاتھ کی ہتھیلی نرمی کے ساتھ پھیریں۔
واضح رہے کہ دائیں جبڑے کے لیے آپ بایاں ہاتھ اور بائیں جبڑے کے لیے آپ دایاں ہاتھ بروئے کارلائیں گی۔
اپنی دونوں ہتھیلیاں اپنی گردن پر اوپر سے نیچے پھیریں۔
کانوں کے پچھلے حصوں اور گردن کے درمیان میں واقع مخصوص مقامات پر ہلکا پھلکا دباؤ ڈالیں ۔
ان مقامات کی نشاندہی تصویر میں کی گئی ہے ۔

تاریخ اشاعت: 2019-03-07

Your Thoughts and Comments

Special Skin Care article for women, read "Chehray Aur Gardan Ka Massage" and dozens of other articles for women in Urdu to change the way they live life. Read interesting tips & Suggestions in UrduPoint women section.