Sard Mausaam Main Rakhain Jild Ka Khayal - Skin Care

سرد موسم میں رکھیں جلد کا خیال - جلد کی حفاظت

بدھ دسمبر

Sard Mausaam Main Rakhain Jild Ka Khayal
موسم سرما میں خشک جلد رکھنے والے افراد کے جلدی مسائل میں بے حد اضافہ ہو جاتا ہے،خشکی کے سبب جلد پر خارش سمیت جلد پھٹنے لگتی ہے اور دن بہ دن یہ مسئلہ بڑھتا جاتا ہے۔طبی و جلد مہارین امراض کے مطابق موسم سرما میں ہر قسم کی جلد خصوصی توجہ مانگتی ہے مگر سب سے زیادہ دیکھ بھال کی ضرورت خشک جلد والے افراد کو ہوتی ہے،چکنی جلد موسم سرما میں خشک ہواوٴں کے سبب نارمل ہو جاتی ہے جبکہ نارمل اور خشک جلد والوں کے لئے مسائل بڑھ جاتے ہیں جن کا علاج روزانہ کی بنیاد پر اپنی روٹین میں چند تبدیلیاں لا کر اور کچھ ٹوٹکے آزما کر کیا جا سکتا ہے۔

ماہرین کے مطابق پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال ہر موسم میں لازم و ملزوم ہوتا ہے مگر سردیوں میں ایڑیوں،ہونٹوں،جلد کے پھٹنے کی بڑی وجہ پانی کی کمی ہوتی ہے،اس لئے سردیوں میں بھی پانی کا زیادہ استعمال لازمی کرنا چاہیے،پانی کا استعمال اگر پیاس نہ لگنے کے سبب یاد نہ رہے تو گھریلو اوقات اور باہر جاتے وقت ہر بیگ میں ایک عدد پانی کی بوتل ضرور رکھیں۔

(جاری ہے)

موسم سرما کے دوران خشک جلد کے مسائل سے چھٹکارہ حاصل کرنے کے لئے مندرجہ ذیل مفید ٹوٹکوں کو اپنا کر زندگی آسان بنائی جا سکتی ہے۔
گلیسرین،عرق گلاب اور لیموں کا رس ہم وزن ملا کر کسی بوتل میں رکھ دیں اور رات کو سونے سے پہلے ہاتھوں،پاؤں اور چہرے کا مساج کریں،یہ ایک بہترین ٹانک ہے۔
دو چمچ بالائی،ایک چمچ شہد اور چار قطرے لیموں کا رس ملا کر پیسٹ بنائیں اور چہرے پر لگا لیں،پندرہ منٹ کے بعد چہرہ دھو لیں،جلد شرطیہ نرم،ملائم اور چمک اُٹھے گی۔


سردیوں میں خشک جلد کے لئے کیلے کا ماسک ایک بہترین علاج ہے،یہ ماسک جلد کو قدرتی نمی فراہم کرتا ہے۔
خشک جلد کے لئے چینی ایک بہترین ایکسفولی ایٹر ہے،3 چمچ چینی میں ایک چمچ شہد اور ایک چمچ دہی ملا لیں اور چہرے پر آہستہ سے اسکرب کی طرح مساج کریں،بعد ازاں ٹھنڈے پانی سے منہ دھو لیں،یہ ایکسفولی ایٹر چہرے کی نمی برقرار رکھے گا۔
تاریخ اشاعت: 2020-12-23

Your Thoughts and Comments

Special Skin Care article for women, read "Sard Mausaam Main Rakhain Jild Ka Khayal" and dozens of other articles for women in Urdu to change the way they live life. Read interesting tips & Suggestions in UrduPoint women section.