Ek Khazana Pane Wala Gora Tha Par Ab Hy Kala - Puzzle No. 621

ایک خزانہ پانے والا گورا تھا پر اب ہے کالا

مزید پہیلیاں

توڑ کے اک چاندی کو کوٹھا

Tour Ke Ek Chandi Ka Kotha

اک گھر میں‌ دو رشتے دار

Ek Ghar Me Do Rishtedar

پانی سے ابھرا شیشے کا گولا

Pani Se Bhara Sheeshe Ka Gola

اس رانی کے کیا ہی کہنے

Us Rani Ke Kya Hai Kehne

ایسا نہ ہو کہ کام بگاڑے

Aisa Na Ho K Kam Bigary

جو بھی اس پر آنکھ جمائے

Jo Bhi Us Par Aankh Jamaye

دن کو سوئے رات کو روئے

Din Ko Soye Raat Ko Roye

مٹی میں سے نکلی گوری

Matti Me Se Nikli Gori

ہم نے اگلا اس نے کھایا

Hum Ne Ugla Usne Khaya

اک ڈبے میں‌ میٹھے دانے

Ek Dabby Me Meethe Danny

کتیا بھونک کہ جو کہتی ہے

Kutiya Bhounk Ke Jo Kehti Hai

رکھی تھی وہ چپ چاپ کیسی

Rakhi Thi Wo Chup Chaap Kaise

Your Thoughts and Comments