Nafsiyat - Joke No. 812

نفسیات - لطیفہ نمبر 812

ایک نوجوان اپنے نفسیاتی تجزےئے کے لئے ماہر نفسیات کے پاس پہنچا۔ ماہر نفسیات نے اس کے سامنے کاغذ پر ایک چکور خانہ بنایا اور پوچھا کہ یہ کیا ہے؟ نوجوان نے جواب دیا‘ لڑکی … ماہر نفسیات نے ایک سیدھی لکیر کھینچی اور پوچھا کہ یہ کیا ہے؟ نوجوان نے جواب دیا‘ لڑکی … نفسیات داں نے کاغذ پر ایک دائرہ بنایا اور پوچھا کہ یہ کیا ہے؟ ”لڑکی…“ نوجوان نے جواب دیا۔ ماہر نفسیات گہرا سانس لے کر بولا۔”میاں صاحبزادے! تمہارے ذہن پر فطری تقاضوں کا غلبہ ہے‘ بہتر ہے کہ تم شادی کر لو۔“ نوجوان بُرا منہ بنا کر بولا۔ ”آپ اتنی فحش تصویریں بنا رہے ہیں … آپ کا کیا خیال ہے‘ کیا ایسی تصویریں دیکھ کر بھی مجھے لڑکی کا خیال نہیں آنا چاہئے؟“۔

مزید لطیفے

حجام

hajjaam

ماسٹر صاحب

Master sahib

دو افیمی

Do Afeemi

کتے کا بچہ

kuttay ka bacha

پیریڈ

Period

اوور ٹائم

Over Time

مرنے کا فائدہ

Marne Ka Faida

دو سکھ

Do sikh

مالکن

malikan

جیسے کو تیسا

jaise ko taisa

عادت

Aadat

قصاب

qassab

Your Thoughts and Comments