Dekhe Hain Aise Bhi Samandar - Puzzle No. 688

دیکھے ہیں‌ ایسے بھی سمندر

dekhe hain aise bhi samandar

مزید پہیلیاں

اپنے منہ کو جب وہ کھولے

Apne Munh Ko Jab Wo Khole

سر ہے چمٹا منہ نوکیلا

Sar Hi Chimta Munh Nokeela

اک حد تک تو گرمی کھائے

Ek Hud Tak Tu Garmi Khaye

کہہ دیں اس کو آتا جاتا

Keh Dena Usko Aata Jata

نیچے سے جب اوپر جائے

Neechy Se Jab Oper Jae

توڑ کے اک چاندی کو کوٹھا

Tour Ke Ek Chandi Ka Kotha

کوئی نہ دیکھے اور دکھلائے

Koi Na Dekh Or Dikhaye

اک بڈھے کے سر پر آگ

Ek Budhe Ke Sar Par Aag

سرکوتھا دھرتی چھپائے

Sar Ko Tha Dharti Chupaye

پانی پی پی پھول رہی ہے

Pani Pee Pee Phool Rahi Hai

دھوپ کبھی نہ اسے سکھائے

Dhoop Kabhi Na Usy Sokhaye

شب بھر وہ پانی میں نہائے

Shab Bhar Woh Pani Me Nahaye

Your Thoughts and Comments